عمران خان آرمی چیف سے کاروباری گفتگو بھی کرتے تھے،خواجہ آصف

عمران خان آرمی چیف سے کاروباری گفتگو بھی کرتے تھے،خواجہ آصف

اسلام آباد(نیا ٹائم)وزیر دفاع خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ ہماری حفاظت کیلئے خون دینے والے محسنوں کا مذاق اڑانے کی ہم ہرگز  اجازت نہیں دیں گے  جبکہ چیئرمین پی ٹی آئی  عمران خان نے افواج پاکستان کو براہ راست  نشانہ بنایا ہے ۔

 

وزیر دفاع خواجہ آصف  کا اسلام آباد میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہنا  تھا کہ پاکستان تحریک انصاف  کے چیئرمین عمران خان ملک و قوم کو ایسے موڑ پر لے آئے ہیں کہ جہاں ہر چیز کا محور ان کا ذاتی اقتدار ہے اور نہ صرف پاکستان کے اداروں کو اس نے ٹارگٹ بنایا ہوا ہے بلکہ اپوزیشن ارکان  کو بھی انتقام کا نشانہ بنایا گیا ہے ۔خواجہ آصف  نے کہا کہ جب وہ اقتدار میں تھے تو  اس وقت اس نے بہت قصیدے پڑھے   تاہم  اب عمران خان نے افواج پاکستان کو نشانہ بنایا ہوا ہے اور بند کمروں میں جس طرح ترلے  منتیں کیں  وہ بھی سب کے سامنے آگیا ہے۔عمران خان آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ  سے کاروباری گفتگو  بھی کرتے رہے ہیں۔

 

وزیردفاع کا مزید کہنا تھا کہ  کہا گیا  تحریک عدم اعتماد ناکام بنا دیں اور غیر معینہ مدت تک ایکسٹینشن لیں جس کا برملا اظہار آپ سب نے سنا مگراس کے باوجود بھی افواج پاکستان  نے نیوٹرل رہنے کا فیصلہ کیا اور ادارے نے آئینی کردار میں محدود ہونے کا فیصلہ کیا۔خواجہ آصف  نے کہا کہ سابق وزیراعظم  نے نیوٹرل لفظ کو گالی بنا دیا اور انہیں تو اپنی والدہ کے نام پر بنائے گئے ہسپتال کا تقدس  بھی نہیں ہے مگر اب  ادارےصرف آئینی اور قانونی کردار تک محدود ہوں گے۔ عمران خان نے سائفر سے اپنی واردات شروع کی اور اسے جعلسازی سے منع بھی کیا مگر یہ ملک اور قوم کی عزت سے کھیل رہے ہیں اور اس سب کا بعدازاں  آڈیو لیکس سے بھی  سبکو پتہ  چل گیا۔

 

 

گوادر ایئرپورٹ کب آپریشنل ہو گا،احسن اقبال نے بتا دیا