کس ملک کی تاریخ میں پہلی بار خواتین ارکان کی تعداد مردوں سے زائد ہوگئی

کس ملک کی تاریخ میں پہلی بار خواتین ارکان کی تعداد مردوں سے زائد ہوگئی

نیوزی لینڈ(نیاٹائم ویب ڈیسک)نیوزی لینڈ کی تاریخ میں پہلی مرتبہ  پارلیمنٹ میں خواتین ارکان کی اکثریت نے مردوں کو بھی  پیچھے چھوڑ دیا ہے۔

 

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق لبرل لیبر پارٹی سے تعلق رکھنے والی رُکن سورایا پیک نے پارلیمنٹ میں حلف اُٹھاکر سپیکر کی جگہ لی جس کے بعد پارلیمنٹ میں مردوں کے مقابلے میں خواتین ارکان کی تعداد میں اضافہ ہوچکاہے۔بین الپارلیمانی یونین کے مطابق نیوزی لینڈ کا شمار اب دنیا کے ان ملکوں  میں کیا جائے گا جو اس برس  اپنے پارلیمنٹ میں 50 فیصد خواتین کی نمائندگی کا دعویٰ کرتے ہیں جن میں کیوبا، میکسیکو، نکاراگوا، روانڈا اور متحدہ عرب امارات  بھی شامل ہیں۔

 

دوسری طرف  نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم بھی ایک خاتون ہیں جبکہ  کیوی ملک کی چیف جسٹس آف سپریم کورٹ اور گورنر جنرل سمیت دیگر اعلی عہدوں پر بھی خواتین اپنے فرائض سرانجام دے رہی ہیں۔

 

زندہ دفنائی گئی خاتون کی حاضردماغی نے اس کی جان بچا لی