سائمن ٹوفل نے امپائر کا فیصلہ درست قرار دیدیا

سائمن ٹوفل نے امپائر کا فیصلہ درست قرار دیدیا

لاہور (نیا ٹائم سپورٹس ڈیسک)پاکستان اور بھارت کے درمیان کھیلے گئے ورلڈکپ ٹی ٹوئنٹی کے میچ میں امپائر کے متنازع فیصلے پر آسٹریلیا کے سابق امپائر سائمن ٹوفل نے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے اس فیصلے کو درست قرار دیا ہے ۔

پاکستان اور بھارت کے درمیان کھیلے گئے میچ میں امپائر کے متنازع فیصلے پر سوشل میڈیا صارفین اور سابق کرکٹرز کی جانب سے سوالات اٹھائے گئے ہیں جس میں محمد نواز کی نو بال اور کوہلی کے فری ہٹ پر بولڈ ہونے کے بعد رنز بنانے پر مختلف لوگوں نے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے امپائر کے فیصلہ کو متنازع قرار دیا تھا ۔ نیوزی لینڈ کے سابق کرکٹر گرانٹ ایلیٹ بھی گزشتہ روز اس فیصلے پر اظہار خیال کرتے ہوئے ناراضگی کا اظہار کیا تھا ۔

آسٹریلیا سے تعلق رکھنے والے دنیائے کرکٹ کے شہرت یافتہ سابق امپائر سائمن ٹوفل نے امپائر کے فیصلے پر خیالات کا اظہار کیا ہے ۔

سوشل میڈیا پر جاری اپنے بیان میں سائمن ٹوفل نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان سنسنی خیز مقابلے کے بعد مجھ سے لاتعداد افراد نے ویرات کوہلی کے فری ہٹ پر بولڈ ہونے اور  رنز لینے سے متعلق سوالات کیے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ آئی سی سی کی پلیئنگ کنڈیشن کے مطابق امپائر نے اس وقت درست فیصلہ کیا۔

سابق امپائر نے کہا ہے کہ فری ہٹ پر سٹرائیکر کو بولڈ آؤٹ قرار نہیں دیا جا سکتا اس لیے اسٹمپ پر لگنے والی بال ڈیڈ نہیں ہے ، انہوں نے کہا کہ یہ بال بھی اس وقت کھیل کا حصہ تصور ہو گی ، اس لیے کرکٹ کے قوانین اور اس صورتحال میں قانون کو مد نظر رکھتے ہوئے بائز کے رنز میرے لیے غلط نہیں۔

 

امپائر کا متنازع فیصلہ ، کیوی آل راونڈر کا طنزیہ ٹویٹ