بیک ڈور ڈپلومیسی ناکام، عمران خان کا لانگ مارچ کا عندیہ

بیک ڈور ڈپلومیسی ناکام، عمران خان کا لانگ مارچ کا عندیہ

اسلام آباد (نیا ٹائم)بیک ڈور ڈپلومیسی ناکام ہو گئی ، چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے آئندہ ہفتے لانگ مارچ کی تاریخ کا اعلان  کرنے کا عندیہ دے دیا ۔

اسلام آباد میں جیل سے رہا ہونے والے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما و سینیٹر اعظم سواتی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا کہ بیک ڈورچینل سے ہمیشہ بات چیت ہوتی رہتی ہے، سیاسی جماعتیں ہمیشہ بیک ڈور چینل سے مذاکرات کرتی ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ مجھے انتخابات کی کوئی امید نظر نہیں آتی ، جمعرات یا جمعےکو لانگ مارچ کی تاریخ کا اعلان کروں گا، ہمیں مذاکرات کیوں کرنے ہیں ، ہم نئے انتخابات چاہتے ہیں، ہمارا لانگ مارچ پرامن ہوگا، ہمارے لانگ مارچ کو لوگ انجوائے کریں گےکسی پر کوئی تشدد نہیں ہوگا۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ جب سے یہ آئے ہیں تحریک انصاف کو ختم کرنے کی کوشش میں لگے ہیں ، احتجاج کرنےوالے پی ٹی آئی کارکنوں پر ظلم کیا گیا،ایک سازش کے تحت جرائم پیشہ لوگوں کو ہم پر مسلط کیا گیا ، سیاسی لوگوں پر کبھی ایسا ظلم و ستم نہیں دیکھا۔

انہوں نے کہا کہ اعظم سواتی کے ساتھ ہر فورم پر جائیں گے، چادر و چار دیواری کا تقدس پامال کرتے ہوئے بغیر کسی وارنٹ کے اعظم سواتی کے گھر میں داخل ہوئے، ان کا جرم کیا تھا؟ یہی کہ بڑے آدمی پر تنقید کردی ، خوفناک بات تو یہ ہےکہ گرفتار کرنے والوں نے گرفتاری کے بعد اعظم سواتی کو کسی اور کے حوالے کر دیا ۔ انہوں نے چیف جسٹس سے مطالبہ کیا کہ وہ ایف آئی اے والوں کو بلوا کر پوچھیں کہ اعظم سواتی کو انہوں نے کس کے حوالے کیا تھا جنہوں نے برہنہ کرکے ان پر تشدد کیا۔ 

سابق وزیراعظم نے کہا کہ مجھے پورا یقین ہے کہ یہ انتخابات نہیں کرائیں گے، مجھے گرفتار کر لیں توکیا لانگ مارچ نہیں ہوگا، لوگ نہیں نکلیں گے، کیا یہ چاہتے ہیں کہ منظم احتجاج نہ ہو ، یا یہ چاہتے یا ان کی خواہش ہے کہ پاکستان سری لنکا کی طرح بن جائے ؟ عمران خان نے کہا کہ منظم احتجاج روکا گیا توملک بند ہوجائےگا، یہ خود فیصلہ کرلیں کہ کیا کرنا چاہتے ہیں۔

 

عمران خان کی نااہلی مقام عبرت ہے ، شہباز شریف