جہاں قانون کی بالادستی ہو وہاں کرپشن نہیں  ہوتی ، عمران خان

جہاں قانون کی بالادستی ہو وہاں کرپشن نہیں  ہوتی ، عمران خان

سرگودھا (نیا ٹائم)چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا کہنا ہے کہ اگر کسی ملک کو تباہ کرنا ہو تو وہاں چوروں کو مسلط کردیں خود بخود تباہ ہو جائے گا ، باہر سے کسی دشمن کی ضرورت نہیں پڑے گی ، جہاں قانون کی بالادستی قائم ہو وہاں کرپشن نہیں ہوتی ۔

سرگودھا یونیورسٹی میں طلباء سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا جامعات فیوچر لیڈرز کی نرسریز ہوتی ہیں، گورنر پنجاب پولیٹیکل لیڈرز کو طلبا سے خطاب کرنے سے کیسے روک سکتے ہیں ۔ برطانوی سیاستدان بھی طلبا سے خطاب کرتے ہیں، آکسفورڈ یونیورسٹی میں نہ صرف برطانوی برطانیہ سیاستدانوں بلکہ عالمی رہنماؤں کو بھی خطاب کی دعوت دی جاتی ہے، گورنر پنجاب اوپر بیٹھے ان  چوروں کی بات نہ سنو ۔

عمران خان نے کہا کہ سب سیاستدانوں کو جامعات میں بلوایا چاہیے، میں تو چاہتا ہوں بلاول بھی آپ کے سامنے آکر کھڑا ہو، یہ الگ بات ہے کہ بلاول کہتا کچھ ہے اور سمجھ کچھ اور آتا ہے ۔ انہوں نے شہباز شریف کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مجھے یقین ہے اگر وہ یہاں آئے تو وہ آپ سے بھی پیسے مانگنا شروع کر دیں گے، سب سیاستدانوں کو موقع ملنا چاہیے کہ وہ طلبا کے سامنے اپنا موقف رکھ سکیں ، لیڈر شپ یونیورسٹیز سے جنم لیتی ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ چوروں کا ٹولہ اوپر آکر بیٹھ گیا ہے، میرا نام سنتے ہی ان کی کانپیں ٹانگنے لگ جاتی ہیں ۔ میری خواہش ہے چاہتا کانپیں ٹانگنے والے کا بھی آپ سے خطاب ہو ، اگر سیاسی لیڈر طلبا سے خطاب نہ کریں گے تو انھیں کیسے پتا چلے گا کہ سیاست کیا ہے، اگر لیڈرز طلبا سے خطاب نہ کریں گے تو سٹوڈنٹس اپنا نظریہ کیسے بنا سکیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ملک فیصلہ کن موڑ پر کھڑا ہے، کچھ سیاستدان عوام کے نام پر اقتدار میں آ کر لوٹ مار کرتے ہیں ۔ اسمبلی میں گیا تووہاں پاکستان کے سارے بڑے ڈاکو نظر آئے، جو معاشرہ ظلم کے آگے جھک جاتا ہے ، وہی  معاشرہ تباہ ہو جاتا ہے، خوشحال ممالک میں انصاف کا نظام قائم ہے، قانون کی حکمرانی ہے اور جہاں انصاف نہیں ہوتا وہ ملک تباہ ہو جاتے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ قانون کی بالادستی ہو تو کرپشن ختم ہو جاتی ہے، سنگا پور میں ایک ایماندار لیڈر نے قانون قائم کیا، سنگا پور میں ایک لیڈر نے طاقتور کو قانون کے تابع کیا اور کرپشن ختم کی، آج سنگا پور میں عوام کی اوسط آمدنی 60 ہزار ڈالر ہے۔

چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ یہاں ملک کا وزیراعظم اسے بنایا گیا ہے جسے 16 ارب روپے کے کیس میں سزا ہونا تھی، آصف زرداری کی چوری اور لوٹ مار پر کتابیں لکھی گئیں ، نیب آصف زرداری کے کیسز ختم کر رہا ہے ۔ سندھ کے گورنر میں مولا جٹ   کا عکس نظر آتا ہے ۔

انہوں نے کہا موجودہ وفاقی کابینہ کے 60 فیصد ارکان ضمانت پر ہیں، میں سیاست نہیں چوروں کے خلاف جہاد کر رہا ہوں ،۔ بڑے بڑے ڈاکو، اربوں روپے کی لوٹ مار کے بعد ملک کے وزیر اعظم بن گئے ۔ اسحاق ڈار کو وزیر خزانہ لگا دیا گیا یعنی دودھ کی رکھوالی پر بلے کو بٹھا دیا، انہوں نے کہا کہ اسحاق ڈار نے مجسٹریٹ کے سامنے منی لانڈرنگ کا اعتراف کیا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ معاشی تباہی سے قبل اخلاقی تباہی آتی ہے، پھر قومیں تباہ ہو جاتی ہیں ۔

عمران خان نے کہا کہ چند روز میں لانگ مارچ کا اعلان کرنے لگا ہوں، یہ سیاست نہیں حقیقی آزادی کے لیے جہاد ہے، آج ہر طرف چوری اور ڈکیتی ہے ۔ معیشت نیچے جبکہ مہنگائی اور بےروزگاری آسمان پر پہنچ گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں چاہوں گا کہ ان چوروں کی غلامی سے بہتر ہے کہ میں مر جاؤں۔

عمران خان نے کہا کہ قوم ایک طرف ہو اور دوسری طرف چور ہوں  تو پھر الیکشن میں یہ ہار جاتے ہیں، انہوں نے کہا کہ یہ امپائر کھڑے کر کے بھی نہیں  جیت سکتے ۔ انسان اس وقت ہارتا ہے جب وہ ہار تسلیم کر لے ۔ کرکٹ سے ایک سبق سیکھا تھا کہ آخری گیند تک مقابلہ کرنے والا ہی حقیقی چیمپئن ہوتا ہے۔  

 

کسی لیڈرنےعدالتی حکم کی خلاف ورزی کی تو سنگین نتائج ہونگے،چیف جسٹس