شاہ زیب قتل کیس میں عمرقیدپانےوالاملزم شاہ رہ جتوئی بری

شاہ زیب قتل کیس میں عمرقیدپانےوالاملزم شاہ رہ جتوئی بری

اسلام آباد(نیاٹائم)سپریم کورٹ نے شاہ زیب قتل کیس میں عمر قید پانےوالے ملزم شاہ رہ جتوئی اور اسکے ساتھیوں کو بری کردیا ہے۔

 

سپریم کورٹ کے  جسٹس اعجازالاحسن کی سربراہی میں 3 رُکنی بینچ نے کیس پر سماعت کی۔ملزموں  کے وکیل لطیف کھوسہ نے دلائل میں کہا کہ فریقین کا پہلے ہی راضی نامہ ہوچکا ہے، ملزموں  کا دہشت پھیلانے کا کوئی ارادہ نہیں تھا، قتل کے واقعے کو دہشت گردی کا رنگ دیا گیا ہے۔بعد ازاں عدالت نے فیصلہ  سناتے ہوئے شاہ زیب قتل کیس کے ملزم شاہ رخ جتوئی اور دیگر ملزموں  کو بری کردیا ہے۔

 

خیال  رہےکہ 25 دسمبر 2012 کو درخشاں تھانے کی حدود میں 20 سالہ نوجوان شاہ زیب  کو بہن کی شادی سے گھر واپسی پر کراچی میں ڈیفنس کے علاقے میں قتل کیاگیا تھا۔شاہ زیب قتل کیس میں ٹرائل کورٹ نے شاہ رخ جتوئی اور نواب سراج تالپور کو سزائے موت سنائی تھی جبکہ  ملزم نواب سجاد اور غلام مرتضیٰ کو عمر قید کی سزا سنائی گئی تھی۔سندھ ہائیکورٹ نے ٹرائل کورٹ کا فیصلہ تبدیل کرتے ہوئے چاروں ملزموں  کو عمرقید سنائی تھی جبکہ ملزموں  نے عمرقید کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیلیں بھی  دائر کر رکھی تھیں۔

 

پی ٹی آئی نے حکیم بلوچ کی جیت کو چیلنج کردیا