امریکا میں موٹاپے اور بھوک کے خاتمے کے لئےبڑااعلان

امریکا میں موٹاپے اور بھوک کے خاتمے کے لئےبڑااعلان

واشنگٹن(نیاٹائم ویب ڈیسک)امریکا میں موٹاپے اور بھوک کے خاتمے کے لیے اربوں ڈالر کے منصوبے کا اعلان کر دیا گیاہے۔

                           

 تقریباً آدھی  صدی کے بعد وائٹ ہاؤس میں بھوک، غذائیت اور ہیلتھ کے موضوع پرکانفرنس کا انعقاد کیا گیا ہے جس کی صدارت امریکی  صدر جو بائیڈن نے کی۔سرکاری اعدادوشمارکے مطابق کم و بیش 42 فی صد بالگ امریکی موٹاپے اور 10فی صد گھرانے خوارک کی قلت کا شکار ہیں۔وائٹ ہاؤس کا بتانا ہےکہ خراب خوراک موٹاپے، شوگر، ہائی بلڈ پریشر اورکینسر کی وجہ  بنتی ہے۔


یو ایس فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن کاکہناہےکہ  80 فی صد سے زیادہ  امریکی سبزی، پھل اور ڈیری مصنوعات کم جب کہ  چینی، چکنائی اور سوڈیم کا زیادہ استعمال کرتے ہیں۔اس موقع پر صدرجوبائیڈن نے کہاکہ 2030 تک بھوک اور ناقص غذا کے باعث بیماریوں میں کمی کیلئے حکومت، نجی کمپنیوں اور معاشرےکو مل کر کام کرنا پڑے گا۔امریکی عہدیداروں کاکہناہے کہ  سرکاری اور نجی شعبے نےمل کر 8 ارب ڈالر اس معاملے میں خرچ کرنے کا وعدہ کیا ہے، جن میں ہسپتال، ٹیک کمپنیاں اور فوڈ انڈسٹری کے بڑے بڑےنام شامل ہیں۔

 

ہرن کی تیزرفتارکارکےاوپرسےچھلانگ لگانے کی ویڈیودیکھیں