• Tuesday, 29 November 2022
اسلام آباد ہائیکورٹ کا شیخ رشید پر برہمی کا اظہار

اسلام آباد ہائیکورٹ کا شیخ رشید پر برہمی کا اظہار

اسلام آباد(نیاٹائم)سیاسی نوعیت کی پٹیشن عدالت لانے پر اسلام آباد ہائیکورٹ سابق وزیرداخلہ شیخ رشیداحمد پر شدید برہم ہوگئی۔

 

اسلام آباد ہائیکورٹ میں 72 رکنی فیڈرل کابینہ کی تشکیل کے خلاف سابق وزیرداخلہ کی درخواست پر سماعت کی گئی۔سیاسی نوعیت کی پٹیشن کورٹ لانے پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے قائد عوامی مسلم لیگ پر شدید برہمی کا اظہار کیا۔چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ اطہر من اللہ نے ریمارکس دیےکہ آگے ایسی درخواست لائی تو مثالی جرمانہ عائد کیا جائے گا، پارلیمنٹ کو مزید بےتوقیر نہ کریں، اسی رویے نے پارلیمان کوکافی نقصان پہنچایا ہے، ایسی درخواست کورٹ نہیں آنی چاہیے، پارلیمنٹ میں عوام کے بھیجے گئےنمائندے ہیں، وہ فورم ہے، ہم مداخلت نہیں کریں گے۔عدالت نے پوچھا کہ جب درخواست گزار خود گورنمنٹ میں تھے تو کیا انہوں نے معاونین خصوصی اور مشیروں کی فہرست لگائی؟ کیا انہوں نے اڈیالہ جیل کا وزٹ کیا، انکو اندازہ نہیں ادھر ہوکیا رہا ہے۔

 

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ کا کہنا تھا کہ شیخ صاحب آپ کی عزت کرتے ہیں آپ پارلیمنٹ کوبے توقیر نہ کریں، یہ عدالت پارلیمنٹ کی بھی عزت کرتی ہے، غیرضروری ایگزیکٹو کے اختیارات میں بھی دخل اندازی نہیں کرتی، اگر آپ کا کوئی انفرادی بنیادی حق متاثر ہو رہا ہے تو ضرور عدالت کا رخ کریں مگر اس طرح نہیں، یہ آپ کی بے بنیاد درخواست ہے، جرمانہ بھی لگاسکتےتھے تاہم تحمل کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔شیخ رشید نے پٹیشن واپس لینے کی استدعا کی جس پر عدالت نے کہا کہ اس حوالے سے مناسب حکم سنائیں گے۔

 

اسحاق ڈار خود ساختہ جلاوطنی ختم کر کے وطن واپس پہنچ گئے