• Tuesday, 29 November 2022
قبضہ مافیا نے قبرستان پر قبضہ کرکے مکانات بنا لیے

قبضہ مافیا نے قبرستان پر قبضہ کرکے مکانات بنا لیے

بہاولپور(نیاٹائم)نورشاہ بخاری قبرستان‘ قبضہ مافیا نے قبرستان کے اراضی پرقبضہ کرکے مکانات بنالیے قبرستان میں جگہ نہ ہونے کے باعث قبروں کے کتبے توڑ کر نئی قبریں کے من مانے ریٹ وصول کئے جانے لگے۔

 

 قبرستان میں 20 ہزار روپے سے 40 ہزار روپے فی قبرریٹ مقررکرلئے گئے شہریوں نے ڈی سی بہاول پورسے فوری نوٹس لینے اورقبرستان کی جگہ واگزارکرانے کامطالبہ کیا ہے‘ ذرائع کے مطابق نورشاہ بخاری قبرستان کاشمار بہاول پورکے قدیم ترین قبرستانوں میں کیاجاتاہے نواب آف بہاول پورکے دورمیں اس قبرستان میں صر ف نابالغ بچوں کی تدفین کی جاتی تھی اوراس کارقبہ کئی ایکٹر پرمحیط تھا مگرقبضہ مافیا کے ہاتھوں  اس قبرستان رقبہ اب صرف چند کنال تک محدودہوگیاہے۔

 

 شہریوں نے میڈیاسے گفتگوکرتے ہوئے بتایاکہ قبرستان میں اب کسی بھی قبرکی کوئی جگہ نہ ہے مگر گورکن قبرستان ودیگرعملہ ملی بھگت کرکے ایسی قبریں جن کے وارثان کئی کئی سال تک اس قبر کی خبرلینے نہیں آتے تواس کے کتبے توڑ کر اس قبرکی جگہ نئی قبر بنادیتے ہیں اور نئی تدفین والے سے بیس سے چالیس ہزار روپے تک وصول کرلیتے ہیں۔ شہریوں نے بتایا کہ پرانی قبریں اور بعض قبروں پر تعمیر کردہ کتبے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں اور کچھ قبریں تو اس حد تک خستہ حال ہیں کہ زمین میں دھنس چکی ہیں۔

 

 بعض قبروں کے چبوترے سطح زمین سے کہیں بلند ہیں۔ یہ اونچی اور نئی قبریں وہ ہیں جنہیں پیسوں کے عوض پرانی اور ٹوٹی پھوٹی قبروں کے اوپر بنانے کی اجازت مل جاتی ہے۔ مبینہ طور پر گورکن مافیا نے پرانی قبروں سے کتبے زبردستی توڑ کر قبر کو ختم کردیتے ہیں اور کئی توایسی قبریں ہیں جن کے ورثا باہر کے ملکوں میں رہنے کی وجہ سے سالوں سے قبرستان نہیں آتے تو ان کے پیاروں کی قبروں کی جگہ نئی قبریں بنادی جاتی ہیں جبکہ قبرستان میں سیکورٹی نہ ہونے کے باعث نشہ کرنے والے افراد نے قبرستان کواپنامسکن بنارکھا۔

 

 اکثر قبروں کی جالیاں دیواریں بھی زبردستی توڑ دی جاتی ہیں قبرستان میں موجودسیدعبداللہ شاہ کی قبرپرفاتحہ خوانی کرنے والے ان کے لواحقین نے میڈیاکوبتایا کہ ان کے والد سیدعبداللہ شاہ کی قبرکی جالیاں مافیا کی جانب سے توڑ دی جاتی ہے جبکہ گذشتہ رات بھی قبر پر لگے ہوئے کتبہ کاشیشہ بھی اکھاڑ دیاگیا شہریوں نے ڈی سی بہاول پور سے فوری نوٹس لینے اورکاروائی کامطالبہ کیا ہے۔

 

82 سال کے بزرگ کا جعلی ڈیتھ سرٹیفیکٹ جاری