ایاز امیر کے بیٹے اور بہو کے درمیان لڑائی کی وجہ بھی سامنے آ گئی

ایاز امیر کے بیٹے اور بہو کے درمیان لڑائی کی وجہ بھی سامنے آ گئی

اسلام آباد (نیا ٹائم   ) معروف صحافی و سابق رکن قومی اسمبلی ایاز امیر کے بیٹے شاہنواز امیر اور ان کی مقتولہ بہو سارہ کے درمیان لڑائی کی وجہ بھی سامنے آ گئے ۔

تفتیشی ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزم شاہ نواز نے اس سے قبل اپنی اہلیہ کو دیگر دو شادیوں کے بارے میں نہیں آگاہ نہیں کیا تھا ، ملزم اپنی بیوی سے مختلف حیلے بہانوں سے پیسے بھی منگواتا رہتا تھا ۔

تفتیشی ذرائع کے مطابق مقتولہ سارہ نے اپنے لیے ایک نئی گاڑی خریدی تھی ، جسے ملزم نے دھوکے سے اپنے نام رجسٹرڈ کروا لیا ۔ جس پر ملزم کی اپنی بیوی سے تکرار بھی ہوئے ، مقتولہ سارہ نے ملزم سے اپنے دئیے گئے سارے پیسوں کا تقاضا کیا اور گاڑی بھی فوری طور پر اپنے نام منتقل کروانے کا کہا ۔

تفتیشی ذرائع کے مطابق ملزم شاہنواز نے مقتولہ کی جانب سے پیسوں کے تقاضے پر طیش میں آ کر اسے قتل کر دیا ۔ سارہ نے اپنی شادی کے حوالے سے کینیڈا میں مقیم اپنے والدین کو کچھ نہیں بتایا تھا ، مقتولہ سارہ بھی کینیڈین شہری تھی ۔

علاوہ ازیں تفتیش میں معلوم ہوا ہے کہ مقتولہ سارہ کے چچا کرنل ریٹائرڈ اکرام اور ضیاالرحیم نے بھتیجی کے قتل کا الزام ایاز امیر اور ان کی سابق اہلیہ پر بھی عائد کیا ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ صحافی ایاز امیر اور ان کی سابق اہلیہ نے ان کی بھتیجی سارہ کو قتل کروایا ہے ۔

دوسری طرف پولیس نے ایاز امیر اور ان کی سابق اہلیہ کے بھی وارنٹ گرفتاری  حاصل کر لئے ہیں جبکہ ملزم شاہنواز کا دو روزہ جسمانی ریمانڈ دیتے ہوئے اسے پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے ۔

واضح رہے گزشتہ روز اسلام آباد کے علاقہ چک شہزاد کے ایک فارم ہاوس پر ملزم شاہنواز نے اپنی اہلیہ سارہ کو سر پر لوہے کے ڈمبل مار کر بے ہوش کرنے کے بعد اسے نہانے والے ٹب میں ڈال کر پانی کھول دیا جس سے ڈوب کر اسے کی موت ہو گئی ۔

 

ڈائریکٹرسیف سٹی پراجیکٹ کی پھندا لگی لاش برآمد