• Tuesday, 29 November 2022
ناظم جوکھیو قتل ، لواحقین نے حلف نامہ عدالت میں جمع کروا دیا

ناظم جوکھیو قتل ، لواحقین نے حلف نامہ عدالت میں جمع کروا دیا

کراچی (نیا ٹائم )شہر قائد میں قتل ہونے والے ناظم جوکھیو اور ملزموں کے درمیان صلح ہو گئی ، کیس میں فریقین نے آپس میں صلح  کر کے حلف نامہ عدالت میں جمع کروا دیا ۔

ناظم جوکھیو کے قتل کیس میں پاکستان پیپلز پارٹی کے رکن سندھ اسمبلی جام اویس سمیت 6 ملزم گرفتار تھے اور آج ملزموں پر فرد جرم عائد ہونا تھی تاہم اس سے قبل ہی لواحقین نے عدالت میں صلح نامہ پیش کر دیا ۔

عدالت میں ناظم جوکھیو کے ورثا نے حلف نامہ جمع کرواتے ہوئے کہا کہ ہماری ملزموں کے ساتھ صلح ہو چکی ہے اور اس کیس کو ختم کر دیا جائے ہمیں اس پر کوئی اعتراض نہیں ۔

عدالت نے کہا کہ ناظم جوکھیو کے قانونی ورثاء سے متعلق نادرا اور مختیار کار سے متعلق رپورٹ بھی جمع کروائیں جس پر ناظم جوکھیو کی والدہ ، بیوہ اور بچوں کی طرف سے عدالت میں حلف نامہ جمع روایا گیا ۔

عدالت نے قانونی ورثاء کے حوالے سے اشتہار اخبار میں شائع کرنے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 15 اکتوبر تک ملتوی کرنے کا حکم دے دیا ۔

واضح رہے 27 سالہ ناظم جوکھیو کو گزشتہ سال 3 نومبر 2021 ء کو شہر قائد کے ضلع ملیر میں پیپلز پارٹی کے رکن سندھ اسمبلی جام اویس کے فارم ہاوس میں تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کر دیا گیا تھا ۔

مقتول ناظم جوکھیو کے بھائی افضل جوکھیو نے الزام عائد کیا تھا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے رکن صوبائی اسمبلی جام اویس سمیت ان کے بڑے بھائی رکن قومی اسمبلی جام عبدالکریم اور ان کے غیر ملکی مہمانوں کو تلور کے شکار سے روکنے اور ویڈیو بنانے کے جرم میں ٹھٹھہ میں جام اویس کے فارم ہاوس میں تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کر دیا گیا تھا ۔

 

گولیاں اور ڈرون عوام کا راستہ نہیں روک سکتے،شیخ رشید