• Friday, 30 September 2022
ضلع لسبیلہ کےمتاثرہ زمیندارکوئٹہ پہنچ گئے

ضلع لسبیلہ کےمتاثرہ زمیندارکوئٹہ پہنچ گئے

کوئٹہ(نیاٹائم)بلوچستان کے ضلع لسبیلہ میں سیلاب سے زراعت مکمل تباہ ہوچکی ہے  اور متاثرہ خاندان  بھی کوئٹہ پہنچ چکے ہیں۔

 

ملک بھر  میں ہونے والی حالیہ بارشوں اور سیلابی ریلوں کی وجہ سے  جہاں ملک بھر میں لاکھوں خاندان بے گھر، کروڑوں افراد متاثر، لاکھوں مویشی سیلاب کی نذر ہوئے ہیں ، وہیں سب سے زیادہ نقصان بلوچستان میں ہوا۔بلوچستان میں  جہاں سیلاب انسانی جانوں اور گھروں کی تباہی کا سبب بنا وہیں بڑے پیمانے پر زراعت کو بھی نقصان پہنچا یا ہے، اورڈسٹرکٹ  لسبیلہ میں تو سیلابی ریلوں نے زراعت کو مکمل تباہ کرکے رکھ دیا ہے۔ڈسٹرکٹ  لسبیلہ کے متاثرہ زمیندارکوئٹہ پہنچ چکے ہیں، اور ان کا کہنا ہے کہ انکی  اربوں روپے کی فصلیں تباہ ہو چکی ہیں اور نئی فصل لگانے کے قابل  بھی نہیں رہے۔

 

صوبائی حکومت تو سیلاب متاثرین کی داد رسی نہ کر پائی  تاہم  غیر سرکاری تنظیمیں پیش پیش ہیں، اور الخدمت فاؤنڈیشن کی  طرف  سے کوئٹہ کے علاقوں کیچی بیگ اور مشرقی بائی پاس پر ساڑھے تین سو سے زائد خیموں پر مشتمل بستی بھی  قائم کردی گئی ہے۔منتظمین کا بتانا  ہے کہ خیمہ بستیوں میں متاثرین کو کھانے پینے اور تعلیم کی سہولیات بھی فراہم کی  جا رہی ہیں ۔منتظمین کا کہنا ہے کہ بچوں کیلئے جھولوں  کا انتظام بھی کیا گیا جہاں وہ دو لمحے خوشی کے مسکرا کر اپنی تباہی کا غم بھلانے کی ایک کوشش کرتے ہیں۔

 

بہاول وکٹوریہ ہسپتال میں صفائی کی صورت حال شدید ناقص