سابق سری لنکن کپتان نے بابر اعظم کو اہم مشورہ دیدیا

سابق سری لنکن کپتان نے بابر اعظم کو اہم مشورہ دیدیا

کولمبو (نیا ٹائم سپورٹس ڈیسک )سری لنکا کے سابق کپتان مہیلا جے وردھنے نے قومی ٹیم کے کپتان  بابر اعظم کو ورلڈ کپ کے حوالے سے اہم مشورہ دیا ہے ۔ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل ریویو میں مہیلا جے وردھنے نے پاکستانی ٹیم کے کپتاب بابر اعظم کے حوالے سے بات کرتے ہوئے انہیں اہم مشورہ دیا ہے ۔

واضح رہے قومی ٹیم کے کپتان بابر اعظم متحدہ عرب امارات میں ہونے والے ایشیا کپ میں  صرف 68 رنز ہی بنا سکے تھے ، کپتان بابر اعظم اپنی فارم کھو دینے کی وجہ سے ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں نمبر ون بیٹر کی پوزیشن سے بھی تنزلی کا شکار ہو گئے ہیں ۔

سابق سری لنکن کپتان مہیلا جے وردھنے نے کہا کہ ٹی ٹوئنٹی ورلد کپ سے قبل بابر اعظم کی فارم کھو جانا پاکستان کیلئے تھوڑا تشویش کا باعث ہے ، وہ گزشتہ دو سال سے جس انداز سے بیٹنگ کر رہے ہیں اس لحاظ سے یہ ٹورنامنٹ سب کیلئے تشویش کا باعث ہے ۔ اب بھی بابر اعظم کو کوالٹی پلیئر سمجھتا ہوں ۔

مہیلا جے وردھنے نے کہا کہ ممکن ہے ایشیا کپ کا حصہ ہونے اور پھر پاک بھارت میچ کے دباوں کی وجہ سے بابر اعظم نے فام مس کر دی ہو ۔ بابر اور رضوان ٹاپ آرڈر پر ٹیم کیلئے تسلسل کے ساتھ رنز بنا رہے تھے۔

سابق لنکن کپتان نے کہا دو برسوں میں پاکستان کی کامیابی کا بنیادی جزو ہی ٹاپ آڑڈر بیٹرز کا بہتر رنز کرنا تھا ، تمام بڑے بیٹرز ایسے مرحلے سے گزرتے ہیں ۔ میں یقین سے کہتا ہوں بابر اعظم بھرپور کم بیک کریں گے ۔

انہوں نے کہا کہ بابر ایشیا کپ میں دو میچز میں اچھی گیندوں پر  آوٹ ہوئے جبکہ کچھ میں نارمل گیندوں پر ہی وکٹ دے بیٹھے ۔ جب آپ کے پاس کوالٹی پلیئر ہوں تو اس پر غیر ضروری دباو نہیں ہونا چاہئے ۔ ورلڈ کپ جیسے ایونٹ میں جانے سے قبل اہم کھلاڑی کو پر اعتماد اور ریلیکس ہونا چاہئے ، یہ تبھی ہو سکتا ہے جب ان پر غیر ضروری دباو نہ ہو ۔

مہیلا جے وردھنے نے بابر اعظم کو مشورہ دیا ہے کہ وہ ورلڈ کپ میں کپتانی اور ادھر ادھر کی چیزوں کو بھول کر بیٹر بنیں اور جتنا ممکن ہو سکتا ہے بیٹر بن کر ہی کھیلیں ۔ اس  کے بعد ہی گراونڈ میں کپتانی کے بارے میں سوچیں ۔ انہوں نے کہا کہ بابر اعظم کو گراونڈ میں کپتانی اور ٹیم کے اہم کھلاڑی کی ذمہ داریوں کو الگ الگ رکھنا ہو گا ۔

 

آئی سی سی کاگیند پر تھوک لگانےسےمتعلق اہم فیصلہ