کراچی پولیس چیف نے لاہور کے جرائم کے حوالے سے بڑی بات کہہ دی

کراچی پولیس چیف نے لاہور کے جرائم کے حوالے سے بڑی بات کہہ دی

کراچی(نیا ٹائم)شہر قائد کے باسی سٹریٹ کرائمز کی بڑھتی ہوئی وارداتوں سے پریشان ہیں مگر سندھ پولیس کراچی شہر میں زیادہ جرائم ہونے سے انکاری ہے۔

 

کراچی چیمبر کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے معروف صنعتکار زبیر موتی والا کا کہنا تھا کہ اس وقت کراچی کی گلی گلی میں  چھینا جھپٹی ہو رہی ہے، 108 تھانوں کے ایس ایچ اوز کیا کر  رہے ہیں؟ ہمیں بتا دیا جائے کہ کیا کراچی کو بند کرنا ہے اور  کیا ہم  یہاں سرمایہ کاری نہ کریں۔ایڈیشنل انسپکٹر جنرل سندھ پولیس جاوید عالم اوڈھو نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا  کہ کراچی والے اپنے دشمن خود ہیں، تاجر واویلا کرتے ہیں اور سنسنی پھیلاتے ہیں  پھر کہتے ہیں کہ  سرمایہ کاری نہیں ہوتی جبکہ لاہور اور دیگر شہروں میں جرائم کی شرح زیادہ ہے۔

 

کراچی پولیس چیف نے جرائم کم دکھانے کیلئے سی پی ایل سی کے کندھے پر رکھ کر بندوق چلاتے ہوئے کہا کہ سی پی ایل سی کے مطابق  گزشتہ سال اٹھارہ ہزار گاڑیاں چھینی گئیں یا چوری ہوئیں جب کہ اس سال صرف تیرہ  ہزار گاڑیاں چھینی گئیں یا چوری ہوئیں ہیں ۔جاوید عالم اوڈھو نے مزید کہا کہ میں مانتا ہوں کراچی میں چوریاں ڈکیتیاں ہو رہی ہیں مگر کیا یہ صرف کراچی میں ہی سب کو نظر آرہی ہیں اور ملک کے کسی اور صوبے یا شہر میں نہیں ہو رہیں کیا۔میں تاجروں سے کہتا ہوں کی آئیں ہمارے ساتھ مل بیٹھیں  مگر ان واویلوں سے کسی کو کچھ نہیں ملے گا۔

 

 

چہلم حضرت امام حسین کے موقع پرسکیورٹی کے فول پروف انتظامات