چہلم حضرت امام حسین کے موقع پرسکیورٹی کے فول پروف انتظامات

چہلم حضرت امام حسین کے موقع پرسکیورٹی کے فول پروف انتظامات

بہاول پور(نیاٹائم)ڈسٹرکٹ پولیس آفیسرعبادت نثارنے چہلم حضرت امام حسین کے موقع پرسکیورٹی کے فول پروف انتظامات کو یقینی بنا نے کی ہدایت کی۔

 

چہلم حضرت امام حسین کے موقع پر30جلوس اور56مجالس منعقد ہوں گی۔ جس میں "A" کیٹگری کے017 ، "B" کیٹگری کے08اور"C" کیٹگری کے21 جلوس برآمد ہونگے۔ مجالس میں"B" کیٹگری کی 06 اور"C" کیٹگری کی50مجالس منعقد ہونگی۔جن پر1800سے زائد پولیس افسران / اہلکاران کے ساتھ300سے زائد  ویلنٹیرزبھی ڈیوٹی کے فرائض سرانجام دیں گے۔ڈی پی او نے ضلع بھر کے ایس ڈی پی او ز اور ایس ایچ اوز کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ وہ جاری کردہ سکیورٹی پلان پر موثر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے۔ سیکیورٹی پلان کے تحت ملازمان کو ڈیوٹی شروع ہونے سے پہلے بریف کریں اور ڈیوٹی کی حساسیت کے بارے میں آگاہ کریں ۔

 

ڈی پی او نے ہدایت کی کہ ڈیوٹی الرٹ ہوکر سرانجام دی جائے تاکہ کوئی ناخوشگوار واقعہ رونما نہ ہوسکے۔ ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز ڈیوٹی پرمامور نفری کی حاضری کو یقینی بنائیں اور کمی نفری کی صورت میں انتظامی کمیٹیوں سے رابطہ کرکے رضاکاروں اور ویلنٹیرزکی ڈیوٹیاں لگائیں۔ ایس ڈی پی او ز اور ایس ایچ اوز اپنے اپنے علاقوں میں جلوس کے آغاز سے پہلے روٹس کا وزٹ کرکے اس بات کو یقینی بنائیں کہ جلوس کے راستے میں آنے والی بلند عمارتوں پر پولیس ڈیوٹی لگائی گئی ہے۔جلوسوں کی سی سی ٹی وی کیمرہ جات سے مانیٹرنگ کی جائے گی۔ جلوس میں شامل ہونے کے لئے میٹل ڈیٹکٹر سے مکمل تلاشی لی جائے، واک تھرو گیٹ کے ذریعے جلوسوں اور مجالس میں داخل ہونے دیا جائے ۔

 

 جلوس اور مجالس میں خواتین کی تلاشی لیڈی پولیس اہلکاران کے ذریعے لی جائے ۔ جلوس اور مجالس کے آغاز سے قبل سپیشل برانچ کے عملہ سے سویپنگ کروائی جائے گی۔ جلوسوں میں شامل ہونے والے راستوں کو خار دار تاروں سے سیل کیا جائے۔ جلوس اور مجالس کے راستے میں واقع ہوٹل، سرائے اور گیسٹ ہائوسز کی مکمل سرچنگ کی جائے اور ان کی نگرانی کی جائے۔تمام ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز پولیس فورس کے ساتھ ویلنٹیرز کوبھی ڈیوٹی شروع ہونے سے پہلے بریف اور ڈیوٹی کی حساسیت کے بارے میں آگاہ کریں۔ لائوڈ سپیکرکے استعمال، وال چاکنگ، ہیٹ مٹیریل، اشتعال انگیز تقاریر، اسلحہ کی نمائش اور ہوائی فائرنگ میں ملوث افراد کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے۔

 

ڈی ایس پی ٹریفک متبادل راستوں کے ذریعے ٹریفک کی روانی کو برقر ا ررکھنے کے ذمہ دار ہونگے ۔ڈی پی اوبہاول پور نے ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز سے امن کمیٹی کے ممبران سے رابطے میں رہنے اور ان کی معاونت حاصل کرنے کی ہدایت کی۔اس موقع پر پولیس لائن بہاول پور میں اضافی نفری سٹینڈ بائے رہے گی جو کسی بھی ایمرجنسی کی صور ت میں فوری اقدامات کریں گی۔

 

نصیرآبادکےڈویژنل ہیڈکوارٹرہسپتال میں سہولیات کافقدان