سندھ پولیس کی نگرانی میں سیلاب متاثرین تک امدادی سامان کی منظم تقسیم

سندھ پولیس کی نگرانی میں سیلاب متاثرین تک امدادی سامان کی منظم تقسیم

حیدر آباد (نیا ٹائم) سندھ میں حالیہ سیلاب سے متاثر ہونے والے خاندانوں میں امدادی سامان تقسیم کرنے والے مخیر حضرات سے لوٹ مار کے واقعات عام ہونے پر حیدر آباد پولیس نے امدادی سامان کی منظم تقسیم اور باعزت طریقہ کار متعارف کروا دیا ۔

حیدر آباد پولیس ہیڈ کوارٹر میں پولیس نگرانی میں سیلاب متاثرین میں امدادی سامان کی منظم اور شفاف تقسیم کی جا رہی ہے ، ڈی آئی جی حید آباد پیر محمد شاہ کے مطابق حیدر آباد پولیس کی طرف سے سیلاب متاثرین کی قیام گاہوں پر سامان کی فراہمی کیلئے پہلے رجسٹریشن کی جاتی ہے ، جس کیلئے خصوصی طور پر سافٹ وئیر بھی تیار کیا گیا ہے ، شناختی کارڈ نمبر کے حساب سے  ہی متاثرین خواتینا ور مردوں کا اندراج کیا جاتا ہے ۔

ایس ایس پی حیدر آباد امجد شیخ کے مطابق متاثرین کی قیام گاہوں میں ہی ٹوکن جار کر کے انہیں بسوں کے ذریعے پولیس ہیڈ کوارٹر تک لایا جاتا ہے جہاں ان کے بیٹھنے کیلئے بھی خصوصی انتظام کیا گیا ہے ۔ انتظار گاہ میں بیٹھے متاثرین کو لنچ اور ڈنر بھی دیا جاتا ہے ۔ ہر متاثرہ شخص یا خاتون کو اعلان کر کے راشن کی فراہمی کے کاونٹر تک بلوایا جاتا ہے ۔

ڈی آئی جی پیر محمد شاہ کے مطابق مخیر حضرات خود آ کر یا ان کی طرف سے جمع کروایا گیا سامان باعزت طریقے سے سیلاب متاثرین میں تقسیم کیا جا رہا ہے ۔

کئی مقامات پر سیلاب متاثرہ خواتین کا بھاری سامان بھی مرد پولیس اہلکار خود کندھے پر اٹھا کر ان کی بسوں تک پہنچاتے ہیں ، جس کے بعد متاثرین کو بسوں کے ذریعے واپس ان کے خیموں تک پہنچایا جاتا ہے ۔

حیدر آباد پولیس کے زیر اہتمام " تمبو گوٹھ" بھی آباد کیا گیا ہے جہاں مقیم 30 ہزار کے قریب سیلاب متاثرین کو سامان کی ضرورت ہے ، ایس ایس پی حیدر آباد امجد شیخ نے ملک بھر کے مخیر حضرات سے اپیل کی ہے کہ وہ حیدر آباد پولیس ہیڈ وکارٹر میں امدادی سامان پہنچائیں یا وہ خود پولیس ہیڈ کوارٹر میں آ کر امدادی سامان سیلاب متاثرین میں تقسیم کریں ۔

 

حکومت سیلاب زدگان کیلئے ماڈل ویلج بنائے گی؛کمشنر ڈی جی خان