ڈالر پھر بے قابو ، 231 روپے سے تجاوز کر گیا

ڈالر پھر بے قابو ، 231 روپے سے تجاوز کر گیا

کراچی (نیا ٹائم) رئیل افیکٹیو ایکسچینج ریٹ 92 روپے سے دوبارہ بڑھ کر 100 روپے کی سطح پر آنے اور سیلاب کی تباہ کاریوں  سے ملکی معیشت کو 40 ارب ڈالر تک نقصان پہنچنے کے خدشات نے ڈالر کے انٹر بینک ریٹ کو بھی پر لگا دئیے ، انٹر بینک میں ڈالر 231 روپے سے تجاوز کر گیا ، اوپن مارکیٹ میں بھی اونچی اڑان جاری ہے ۔

انٹر بینک میں کاروباری دن کے  دوران ڈالر کی بڑھتی ڈیمانڈ کے بعد ایک موقع پر ڈالر 2 روپے 58 پیسے کے اضافے کے ساتھ 232 روپے 40 پیسے کی سطح پر پہنچ گیا تاہم دوپہر کے بعد ڈالر کی ڈیمانڈ میں کمی کے بعد ڈالر کی قدر 1٫70 روپے کی اضافے کے ساتھ 231 روپے 52 پیسے کی سطح پر بند ہوا ۔

دوسری طرف اوپن کرنسی مارکیٹ میں بھی ڈالر کی قدر میں 2 روپے کا اضافہ ہوا جس کے بعد ڈالر 238 روپے کا ہو گیا ، ماہرین کا کہنا ہے کہ حالیہ دنوں میں ڈالر 235 روپے تک بھی پہنچ سکتا ہے ، بڑھتی مہنگائی کے باعث دوست ممالک کی طرف سے حسب وعدہ مطلوبہ فنڈز کی عدم فراہم کے باعث درآمدتی سرگرمیاں متاثر ہو رہیں جس کی وجہ سے معشت کی نمو بھی متاثر ہونے کا امکان ہے ۔ لہذا ان عوام کے پیش نظر جون 2023 تک انٹر بینک مارکیٹ میں  ڈالر 250 روپے کی سطح پر بھی پہنچنے کا امکان ہے ۔

معاشی ماہرین کے مطابق یورپ میں جاری کساد بازاری سے بھی پاکستانی برآمدات متاثر ہونے اور سیلاب کی وجہ سے درآمدات پر انحصار بڑھنے کے خدشات نے بھی پاکستانی روپے کی قدر میں کمی لائی ہے ۔

 

ڈالر کی دوبارہ اونچی اڑان جاری ، 229 روپے سے تجاوز کر گیا