سیلاب سے نقصانات کا حجم 30 ارب ڈالر سے تجاوز کا خدشہ  ہے ، مسعود خان

سیلاب سے نقصانات کا حجم 30 ارب ڈالر سے تجاوز کا خدشہ  ہے ، مسعود خان

اسلام آباد (نیا ٹائم) امریکا میں تعینات پاکستانی سفیر مسعود خان نے کہا ہے کہ پاکستان میں حالیہ سیلاب اور بارشوں کے باعث تباہی میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے ، خدشہ ہے کہ نقصانات کا حجم 30 ارب ڈالر سے  بھی بڑھ جائے گا ۔

ترک نشریاتی ادارے ٹی آرٹی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سیلاب نے تباہی مچا دی ہے اور صورتحال مزید تباہ کن ہوتی جا رہی ہے ۔ ماحولیاتی تبدیلی سے پاکستان شدید متاثر ہوا ہے ، پاکستانی سفیر نے کہا کہ پاکستان بہت مشکل صورتحال کا سامنا کر  رہا ہے ، ملک کو تباہی در تباہی کا سامنا ہے ، سیلاب زدہ علاقوں میں بیماریاں پھیل رہی ہیں ، لوگ بڑے پیمانےپر بے گھر ہوئے ہیں ، لاکھوں مویشی ہلاک جبکہ فصلیں بھی تباہ ہوئیں ۔

پاکستانی سفیر نے  سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ کے بیان کے حوالے سے کہا کہ پاکستان میں کل نقصانات کا حجم 30 ارب ڈالر سے بھی تجاوز کرنے کا خدشہ ہے  ، پاکستان تباہی سے نمٹنے کی کوششیں کر رہا ہے تاہم تباہی اتنی زیادہ ہے کہ ہم اکیلے یہ نہیں کر سکتے ، اسی لیے عالمی برادری سے  بھی مدد کی اپیل کی ہے ۔

مسعود خان نے مزید کہا کہ سیلاب سے پہلے بھی پاکستان مسائل کا شکار تھا ، یوکرین جنگ کی صورتحال کے باعث ہمِن خوراک کے عدم  تحفظ جیسے بڑے مسئلے کا سامنا تھا ، پاکستان معاشی بہتری کیلئے اقدامات کر رہا تھا اور ہمیں اس میں کامیابی بھی حاصل ہوئی تھی کیونکہ ہم مثبت سمت میں جا رہے تھے لیکن حالیہ سیلاب نے مشکلات بڑھا دی ہیں ۔

انہوں نےمزید  کہا پاکستان کا ایک تہائی سے زیادہ حصہ زیر آب آیا ہے اور سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں انفراسٹرکچر  مکمل طور پر تباہ ہو گیا ہے ، ہمیں متاثرہ علاقوں کی بحالی ، آباد کاری اور تعمیر نو کیلئے بھاری سرمایہ کاری درکار ہو گی ۔

پاکستانی سفیر نے کہا کہ مستقبل میں ایسی آفات سے نمٹنے کیلئے تعمیراتی شعبے کو ریگولیٹ کرنے کے ساتھ ساتھ آبی وسائل کے تحفظ کیلئے بھی جامع نظام وضع کرنا ہو گا ۔

 

چیف سیکرٹری پنجاب صوبے میں سیاسی مداخلت سے پریشان