سندھ میں سیلاب مزید 12 افراد کی زندگیاں نگل گیا

سندھ میں سیلاب مزید 12 افراد کی زندگیاں نگل گیا

سیہون (نیا ٹائم) سیلاب کی تباہ کاریاں جاری ہیں ، سندھ میں 24 گھنٹوں کے دوران سیلاب مزید 12 افراد کی زندگیاں نگل گیا ، جاں بحق ہونے والوں میں 4 بچے بھی شامل ہیں ۔

سندھ میں بھان سعید آباد جوہی لنک روڈ پر اولڈ چک کے قریب چھوٹا پل سیلابی پانی میں بہہ گیا ، پانی کا ریلا دادو کے رنگ بند  سے اوور فلو ہو گیا ۔

یونین کونسل یار محمد کلہوڑو کے دیہاتوں میں سیلابی پانی داخل ہو گیا ، جوہی برانچ پر لگنے والا کٹ 12 گھنٹوں کی کوششوں کے بعد بھر دیا گیا ۔

دوسری طرف منچھر جھیل کے اڑل ہیڈ ، اڑل ٹیل اور دانستر نہر پر لگنے والے کٹ سے دریائے سندھ میں پانی کا  اخراج 50 ہزار کیوسک ہو گیا ۔

بدین کی پران ندی میں پڑنے والا 50 فٹ چوڑا شگاف 10 روز بعد بھی ختم نہ کیا جا سکا ، دوسری طرف سیلابی پانی میں ڈوبے دیہاتوں میں پانی کی سطح بلند ہو رہی ہے ۔

دریائے سندھ میں اس وقت کوٹری بیراج پر اونچے درجے کا سیلاب ہے جہاں پانی کا بہاو 6 لاکھ کیوسک سے زیادہ ہے ، کئی مقامات پر پشتوں سے پانی رسنا بھی جاری ہے ، ایریگیشن کا عملہ اور مقامی افراد رساو روکنے کیلئے کوششیں بھی کر رہے ہیں ۔

نوشہرو فیروز میں میونسپل کمیٹی کے وارڈ نمبر 16 میں ابھی تک تاحد نگاہ پانی ہی پانی موجود ہے اور 30 سے زائد گاوں کے مکین گھروں میں محصور ہیں ، دوسری طرف سانگھڑ کے گاوں کیوڑ ملاح اور دیگر علاقوں کے شہری بھی تاحال نکاسی آب کے منتظر ہیں ۔

 

سیلاب زدگان کے کیمپ میں شادی کی شہنایاں