ڈالر کی قیمت دوبارہ بے لگام ، روپیہ بے قدر

ڈالر کی قیمت دوبارہ بے لگام ، روپیہ بے قدر

کراچی (نیا ٹائم  ) امریکی ڈالر کی قیمت دوبارہ بے لگام ہو گئی ، امریکا میں جارحانہ انداز میں شرح سود بڑھانے کی پالیسی نے دنیا بھر میں ڈالر کی قدر بڑھا دی ، پاکستان میں آنے والے مسافروں پر کرنسی ظاہر کرنے کی شرط نے بھی ڈالر  کی قدر بڑھا دی ۔

کاروباری دن  میں انٹر بینک میں ڈالر کی قدر میں اضافے کے بعد 225 روپے سے بھی تجاوز کر گئی جبکہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر 234 روپے کی سطح سے نیچے آ گیا ہے ۔

انٹر بینک میں ڈالر کی ڈیمانڈ میں اضافے کے باعث کاروباری دورانیے کے دوران ایک موقع پر ڈالر کی قدر 226 روپے کی سطح سے بھی تجاوز کر گئی تاہم کاروباری دن کے اختتام پر ڈالر کی طلب کم ہونے کے باعث ڈالر کی قدر 225٫42 روپے کی سطح پر بند ہوئی ، اوپن کرنسی مارکیٹ میں طلب کی عدم دلچسپی کی وجہ سے ڈالر کی قدر میں ایک روپے کی کمی ہو گئی جس کے بعد ڈالر 233 روپے کی سطح پر آ گیا ۔

معاشی ماہرین کے مطابق سیلاب کی تباہ کاریوں اور زر مبادلہ کی جہ سے پاکستانی معیشت پہلے ہی چیلنجز سے  دوچار ہے ایسے حالات میں امریکا کی طرف سے اپنی بلند افراد زر کی شرح کو دو فیصد تک گھٹانے کیلئے جارحانہ انداز میں شرح سود میں اضافے کی پالیسی سے عالمی سطح پر مد مقابل کرنسیوں کی نسبت امریکی ڈالر تگڑا ہو رہا ہہے ۔ جس کے باعث پاکستانی روپے پر بھی منفی اثرات مرتب ہوئے ہیں ۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ یورپی ممالک کی معیشت میں گراوٹ اور کساد بازاری سے بھی پاکستان کی آئی ایم ایف پروگرام میں شمولیت کے باوجود کرنٹ اکاونٹ خسارہ ، درآمدی ادائیگیون اور بڑھتی افراد زر جیسے چیلنجز کا سامنا ہے جس سے روپیہ کمزور ہو رہا ہے ۔

 

عالمی مارکیٹ میں کمی ، پاکستان میں خوردنی تیل کی قیمتیں  کم نہ ہو سکیں