• Friday, 30 September 2022
پشاور ہائیکورٹ میں منشیات آگاہی مہم تقریب کا انعقاد

پشاور ہائیکورٹ میں منشیات آگاہی مہم تقریب کا انعقاد

پشاور(نیا ٹائم) پشاور ہائی کورٹ میں منشیات کے خلاف آگاہی مہم کے حوالے سے ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں ہائی کورٹ بار کے وکلاء کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

 

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نجی  تنظیم کے چیئرمین ملک رؤف اعوان کا کہنا تھا  کہ ہمارے نوجوانوں میں بڑھتے ہوئے منشیات کے رحجان کو روکنے کے لئے تمام شعبہ ہائے زندگی سے منسلک افراد کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔تنظیم کے چیئرمین نے  حکومت وقت سے مطالبہ کیا کہ تعلیمی نصاب میں منشیات کی روک تھام بارے  باقاعدہ ایک چیپٹر شامل کیا جائے تاکہ آنے والی نسلیں اس لعنت سے بچ سکیں جس میں وکلاء، سکیورٹی فورسز، اینٹی نارکاٹکس، ڈاکٹر، تاجر، صنعتکار، سیاستدان اور بیوروکریٹس کو مل جل کر اس لعنت کو ختم کرنا ہوگا تاکہ جلداز جلد ہمارے ملک اس لعنت کا خاتمہ ہوسکے۔ اس موقع پر ملک رؤف اعوان نے پانچ سو منشیات کے عادی مریضوں کے مفت علاج کا اعلان بھی کیا۔

 

  اس موقع پر سپریم کورٹ بار کے صدر عبداللطیف آفریدی، سنیئر وکیل رضاء اللہ، ولی خان آفریدی،ہائی کورٹ بار کے صدر رحمان اللہ، جنرل سیکرٹری فاروق آفریدی، سینئر وکیل آصف سید،ایڈوکیٹ فیصل فاروق اور دیگر افراد نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ملک رؤف اعوان نے کہا کہ وکلاء حضرات معاشرے سے اس لعنت کو ختم کرنے میں کلیدی ادار ادا کرسکتے ہیں جبکہ  حکومت سکول و کالج میں منشیات کے خلاف مہم کے حوالے سے کتابوں میں ایک چیپٹر اس حوالے سے بھی شائع کرے تاکہ آنے والی نسلیں اس لعنت سے بچ سکیں۔  وکلاء برادری نے اس کمپین کو سراہا اور بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی۔

 

 

اے اے سی کے بڑے ہوٹلز پر چھاپے، منیجرز گرفتار