چین میں مہنگائی بلند ترین شرح پر پہنچ گئی

چین میں مہنگائی بلند ترین شرح پر پہنچ گئی

بیجنگ (نیا ٹائم ویب ڈیسک ) کورونا وبا کے بعد دنیا کو مہنگائی کی لہر کا سامنا ہے ، کورونا کے بعد پہلی بار چین میں مہنگائی ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے ، مہنگائی میں گزشتہ دو سال کے دوران شدید اضافہ ہوا ہے ۔

چین کے محکمہ شماریات نے مہنگائی کے حوالے سے تفصلات جاری کی  ہیں جس کے مطابق گزشتہ سال کی نسبت رواں برس جولائی میں 2٫7 فیصد مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے ۔ اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں بھی نمایاں اضافہ دیکھا گیا ہے ۔

چین میں سبزیوں اور دیگر اشیاء کی قیمتوں میں 6٫3 فیصد تک اضافہ ہوا ے جبکہ یہ شرح ستمبر 2020 ء کے بعد پہلی بار اتنی ہوائی ہے ، اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں یہ بڑا اضافہ ہے ۔

چین میں مجموعی طور پر جولائی 2020 کے بعد پہلی بار سب سے زیادہ مہنگائی ریکارڈ کی گئی ہے ۔ ایک طرف اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں اضافہ دیکھا گیا ہے تو دوسری طرف دیگر اشیاء کی قیمتوں میں 0٫1 فیصد کمی دیکھنے میں آئی ہے ۔

واضح رہے چین میں کورونا وبا کے باعث معاشی سرگرمیوں پر پابندیوں کے باعث مختلف اشیاء کی طلب میں کمی واقع ہوئی ہے ۔

 

یونان 12 سال بعد یورپی یونین کے سرویلنس فریم ورک سے خارج