محکمہ زراعت کا مکئی کے کاشتکاروں کے نام اہم پیغام

محکمہ زراعت کا مکئی کے کاشتکاروں کے نام اہم پیغام

فیصل آباد(نیاٹائم)محکمہ زراعت نے کاشتکاروں کو مکئی کی اگیتی اقسام کی کاشت بیس اگست تک مکمل کرنے کی ہدایت کردی ہے۔

 

 کسانوں کو ہدایت میں کہا گیا ہے کہ کاشتکار مکئی کی کاشت کیلئے بھاری زرخیز زمین کی سلیکشن کرتے ہوئے محکمہ زراعت کی منظور شدہ اقسام صدف، ساہیوال2002، اگیتی 2002، ہائبرڈ ایف ایچ 810 وغیرہ کی کاشت مقررہ وقت پر کرلیں تا کہ بہتر پیداوار حاصل کی جاسکے، نیز بارانی ایریاز میں مکئی مون سون کا شدید سیز ن شروع ہونے سے قبل کاشت کر لی جائے تاکہ پودے جڑوں کا سسٹم قائم کرتے ہوئے بارشوں سے صحیح فائدہ اٹھا سکیں۔

 

اسسٹنٹ ڈائریکٹر نے بتایا کہ مکئی کی بہترین پیداوار کیلئے ڈرل کاشت کی صورت میں بارہ سے پندرہ کلو گرام، کھیلیوں پر کاشت کی صورت میں آٹھ سے دس کلو گرام اور بطور چارہ چالیس سے پچاس کلو گرام بیج فی ایکڑ استعمال کیا جائے۔ مکئی کی شاندار کاشت کیلئے دس سےپندرہ گڈ ے یا چارسےپانچ ٹرالی گوبر کی گلی سڑی کھاد زمین کی تیاری کے وقت لازمی ڈالنی چاہیے۔آبپاش علاقوں میں فاسفورس اور پوٹاش کی ساری مقدار اور نائٹروجن کا پانچوا ں حصہ بوائی کے ٹائم استعمال کریں جبکہ بارانی ایریاز میں ساری کھاد بوائی کے وقت ڈالی جائے۔

 

انہوں نے کہا کہ مکئی کی زیادہ پیداوار کیلئے جڑی بوٹیوں کی بروقت تلفی بھی لازمی ہے۔انہوں نے کہا کہ مکئی کی فصل سنگل رو کاٹن ڈرل سے سوادوسے اڑھائی فٹ کے فاصلے پر ہوسکتی ہے لیکن موسمی مکئی کیلئے پودوں کی تعداد اٹھائیس سے تیس ہزار فی ایکڑ اور کاشت ہمیشہ سیدھی قطاروں میں ہونی چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ مزید انفارمیشن، مشاورت یا رہنمائی کیلئے محکمہ زراعت کے فیلڈ عملے سے بھی رابطہ کیا جا سکتا ہے۔

 

ترقی پسندکاشتکار کس طریقے سے اچھی پیداوار حاصل کرسکتےہیں