سبزچائے مفید یا نقصان دہ، تحقیق سامنے آگئی

سبزچائے مفید یا نقصان دہ، تحقیق سامنے آگئی

کولمبس(نیاٹائم ویب ڈیسک)ایک نئی ریسرچ سے پتہ چلا ہے کہ سبز چائے کے بہت سے فوائد میں سے ایک یہ بھی ہے کہ یہ جادوئی مشروب ذیابیطس میں کافی فائدہ مندہوتا ہے اور معدے کے نظام میں موجود بیکٹیریا کوتندرست رکھتے ہوئے اندرونی باڈی سوزش (انفلیمیشن) بھی کم کرتا ہے۔ 

 

اس ضمن میں ماہرین نے میٹابولک سنڈروم کے مریض اور صحتمند افرادپر سبزچائے کے اجزاآزمائے اور ان کے رزلٹ دیکھے ہیں۔ یہ ریسرچ اوہایو اسٹیٹ یونیورسٹی کے سائنسدانوں نےکی ان کا کہنا ہے کہ سبز چائے ہیومین معدے اور نظامِ ہاضمہ میں مفید بیکٹیریا میں اضافہ کرتی ہے جس سے میٹابولک سنڈروم سے منسلک طبی خطرات میں کمی آتی ہے۔ان امراض میں ذیابیطس، دل کے مریض اور فالج وغیرہ قابلِ ذکرہیں۔ نئی ریسرچ میں جامعہ اوہایو نے پروفیسر رچرڈ برونو نے چوہوں پر تجربے کیے۔ جب انہوں نے سبز ٹی کے مفید اجزا چوہوں کی غذا میں مکس کیے تو پہلے آنتوں اور معدے میں مفید بیکٹیریا بڑھ گئے۔ ان سے پورا سسٹم بہتر ہوا۔

 

اس کے بعد چوہوں میں کارڈیومیٹابولک یعنی دل سے جڑے مسائل کم نظر آئے جو ایک بڑی دریافت ہے۔ گرین ٹی سے محروم چوہوں میں کارڈیو میٹابولک امراض کاتناسب زیادہ تھا۔ اس کے بعد انسانوں پر آزمائش کا آغاز ہوا۔ اس مطالعے میں کل چالیس افراد شامل کئے گئے جن میں سے اکیس میٹابولک سنڈروم کے شکار تھے جبکہ بقیہ انیس افراد صحتمند تھے۔شرکا کو اتھائیس دن تک کیٹاچن سے بھرپور چیونگ گم جیسی شے دی گئی جس میں 5 کپ گرین ٹی کے برابر غذائیت تھی۔ اس کے بعد تمام شرکا کو مزید اتھائیس  دن تک فرضی دوا دی گئی اور ان کے مابین ایک ماہ کا وقفہ رکھا گیا۔

 

اس دوران شرکا کے بلڈ میں شکر، چکنائی اور دیگر اجزا پائی گئی اور آنتوں میں جلن ناپنےکیلئے فضلے کے ٹیسٹ بھی کیے گئے۔ جن افراد نے سبزچائے کے اجزا استعمال کئے ان کے بلڈ میں گلوکوز کا تناسب کم تھا اور اندرونی سوزش میں بھی نمایاں طور پر کمی آئی۔

 

امریکی ادارے  کا محکمہ صحت خیبر پختونخوا کیلئے بڑا تحفہ