پی ٹی آئی کا الیکشن کمیشن فیصلے پر عدالت جانے کا فیصلہ

پی ٹی آئی کا الیکشن کمیشن فیصلے پر عدالت جانے کا فیصلہ

اسلام آباد (نیا ٹائم  ) پاکستان تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن کی جانب سے سنائے جانے والے ممنوعہ فنڈنگ کیس کے فیصلے پر اسلام آباد ہائیکورٹ جانے کا فیصلہ کر لیا ۔

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر کے مطابق دو سے تین دن میں پی ٹی آئی الیکشن کمیشن کے فیصلے کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ سے رجوع کرے گی ۔انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن فیصلے کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں دو مختلف پٹیشنز دائر کی جائیں گی ۔

اسد عمر نے کہا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر کی جانے والی درخواست میں سے ایک توہین عدالت کی جبکہ دوسری درخواست الیکشن کمیشن کے فیصلے میں قانونی غلطیوں کے خلاف دائر کی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ توہین عدالت کی درخواست میں الیکشن کمیشن کی جانب سے سپریم کورٹ کے فیصلے خلاف ورزی پر دائر کی جائے گی ۔

واضح رہے پاکستان تحریک انصاف کے بانی رکن اکبر ایس بابر نے 2014 ء میں پارٹی کی ممنوعہ فنڈنگ پر الیکشن کمیشن میں کیس دائر کیا تھا ۔ 8 سالہ طویل سماعت کے بعد الیکشن کمیشن نے 21 جون 2022 ء کو کیس کا فیصلہ محفوظ کیا گیا ۔

آج الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی کی ممنوعہ فنڈنگ کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف نے ممنوعہ فنڈنگ حاصل کی ، ممنوعہ فنڈنگ ثابت ہونے پر انہیں شوکاز نوٹس بھی جاری کیا گیا ہے ۔ فیصلے میں مزید کہا گیا ہے کہ کیوں نہ پی ٹی آئی کے ممنوعہ فنڈز ضبط کر لئے جائیں ۔ الیکشن کمیشن دفتر قانون کے مطابق باقی کارروائی بھی کرے ، فیصلہ کی کاپی وفاقی حکومت کو بھی بھجوا دی گئی ہے ۔

 

الیکشن کمیشن کا فیصلہ پی ٹی آئی کیلئے انتہائی برا ثابت ہو گا ، سربراہ پلڈاٹ