مدرسے کے استاد نے درندگی کی انتہا کردی

مدرسے کے استاد نے درندگی کی انتہا کردی

رحیم یار خان (نیاٹائم) رحیم یار خان کےایک مدرسے میں استاد کی کئی بچوں سے مبینہ زیادتی سچ ثابت ہو گئی۔پولیس کے مطابق مدرسے میں بچوں سے مبینہ زیادتی کا واقع تھانہ صدر صادق آباد کے علاقے بھٹہ واہن میں پیش آیا، متاثرہ بچوں کی عمریں 10 سے 12 سال کے درمیان بتائی گئی ہیں۔

 

میڈیارپورٹس کے مطابق متاثرہ بچوں نے میڈیا کو بتایا کہ قاری صاحب نے اب تک 6 بچوں کو زیادتی کانشانہ بنایا ہے اور زیادتی کاشکاربچوں کودھمکایا کہ زیادتی کے بارے میں گھر والوں کو بتایا تو سب کوجان سے مار دوں گا۔

 

بچوں کےورثاء کا کہنا ہے کہ بچوں کے بتانے پر معلوم ہوا کہ مدرسے کے استاد نے طلبہ کو زیادتی کا نشانہ بنایا، اس لیے وہ پڑھنے نہیں جاتے، ورثاء نے پولیس حکام سے اپیل کی ہےکہ ملزم کو گرفتار کرکے سخت کارروائی کی جائے، جبکہ دوسری جانب اہل علاقہ کا مطالبہ ہے کہ ایسےمعلم کو پھانسی پر لٹکا دینا چاہیے۔

 

پولیس نےبچوں کےورثاکی شکایت پر متاثرہ بچوں کو میڈیکل کے لیے تحصیل اسپتال منتقل کیا جہاں 3 بچوں کے ساتھ زیادتی کی تصدیق ہوچکی ہے۔پولیس کا کہنا بچوں سے زیادتی کے الزام کے بعد مدرسے کا استاد علاقے چھوڑکر فرار ہو گیا، استاد کے خلاف مقدمہ درج کر کے اس کی گرفتاری کے لیے پولیس کی ٹیمیں چھاپے ماررہی ہیں ۔

 

پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ، وزیراعظم نے بھی بیان جاری کردیا