جاپانی ساحل پر ڈولفن مچھلیوں کے شہریوں پر حملے

جاپانی ساحل پر ڈولفن مچھلیوں کے شہریوں پر حملے

ٹوکیو(نیا ٹائم ویب ڈیسک)جاپان میں ساحلِ سمندر پر جانے والوں عام عوا م سمیت سیاحوں  کو خبردار کیا جا رہا ہے کہ ڈولفن کے حملوں سے بچ کر رہیں۔

 

جاپانی شہر فُوکُوئی میں کم از کم دس  ڈولفن کے حملوں کے واقعات سامنے آئے ہیں اور حکام نے مقامی ساحل پر تیراکوں کو خبردار کرنے کیلئے اشارے لگائے ہیں تاکہ وہ ڈولفن کے قریب نہ جاسکیں۔فُوکُوئی کے سیاحت کے شعبے کیلئے کام کرنے والے ماساکی ٹاسوئی  نے کہا کہ شہری حکام کا ماننا ہے کہ تمام تر حملے ایک ہی ڈولفن کیجانب سے کیے جا رہے ہیں۔ اس سے پہلے یہ حملے اپریل میں کوشِینو کے ساحل پر دیکھے گئے تھے۔مقامی اخبار کے مطابق تازہ ترین حملہ  رواں ماہ چوبیس  جولائی کو کیا گیا جب ڈولفن نے ایک  چالیس سالہ شخص کے ہاتھ پر کاٹ کر انہیں زخمی کردیا۔

 

مقامی میڈیارپورٹس  کے مطابق حکام کیجانب سے موسمِ گرما میں ساحل کھولے جانے کے بعد سے اب تک ایسے دس واقعات سامنے آ چکے ہیں جبکہ  ساحل پر لگائے  گئے تنبیہی اشاروں پر لکھا گیا ہے کہ ڈولفنز کو مت چھوئیں۔حکام ساحلی پٹی پر ایسے آلات نصب کرنے کی پلاننگ بھی کر رہےہیں جن سے نکلنے والی الٹرا سونک لہریں ڈولفنز کو ساحل سے دور رکھیں گی۔ماساکی کا کہنا تھا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ ڈولفن ناک اور پشت پر موجود ابھار پر چھوا جانا پسند نہیں کرتیں اس لیے شہریوں  کو بھی چاہیئے کہ وہ  ڈولفنز کو ہاتھ لگانے سے اجتناب برتیں۔

 

 

بھارت میں موٹرسائیکل سوارکےچالان کاانوکھاواقعہ