پنجاب حکومت کا100یونٹ تک مفت بجلی دینےکافیصلہ معطل

پنجاب حکومت کا100یونٹ تک مفت بجلی دینےکافیصلہ معطل

اسلام آباد(نیاٹائم) الیکشن کمیشن نے وزیر اعلی پنجاب کی  طرف  سے روشن گھرانہ سکیم کو 17 جولائی تک معطل کردیا ہے۔چیف الیکشن کمشنر نےکہا،پنجاب کے 20 حلقوں میں شفاف الیکشن ہوں گے۔

 

 چیف الیکشن کمشنر نے کہا ہے کہ ضمنی الیکشن کو متنازع بنانے سے متعلق تمام پراپیگنڈا کو مسترد کرتے ہیں، الیکشن کمیشن کو قانون نافذ کرنے والے اداروں کی پہلے سے زیادہ مدد حاصل ہے، پنجاب کے 20 حلقوں میں انتخاب صاف شفاف ہوگا۔

 

میڈیارپورٹس کے مطابق چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجا کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے وزیر اعلیٰ پنجاب کے روشن گھرانا پروگرام کے اعلان پر نوٹس کی سماعت کی، وزیر اعلیٰ پنجاب کے وکیل خالد اسحاق کا کہنا تھا کہ حمزہ شہباز کی طرف سے 100 یونٹ کے حوالے سے منصوبے کا اعلان تو بجٹ میں جاری ہوچکا، یہ اعلان مخصوص علاقہ کیلئے نہیں پورے صوبے کیلئے ہے اور مقصد ووٹرز کو اپنی طرف مائل کرنا نہیں۔

 

چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجا نے کہا کہ اگر بجٹ میں اعلان کردیا تھا تو پھر نیوز کانفرنس کی ضرورت کیوں  پیش آئی؟الیکشن کمیشن کے ممبر سندھ کا کہنا تھا کہ جب آپ انتخابی  مہم کے اندر ایسے اعلانات کرینگے تو اسکو اثر انداز ہونے کی کوشش ہی سمجھا جا تاہے۔اس موقع پر ڈی جی لا نے کہا کہ الیکشن کمیشن کا کام تمام پارٹیوں  کو لیول پلئینگ فیلڈ فراہم کرنا ہے،مفت بجلی فراہم کرنے کا اعلان ضمنی الیکشن  پر اثرانداز ہونے کی کوشش ہے۔سماعت کے بعد الیکشن کمیشن نے روشن گھرانہ سکیم پر عملد رآمد 17 جولائی تک روکتے ہوئےقرار دیا کہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر قانون حرکت میں آئےگا، چیف الیکشن کمشنرکا کہنا تھا کہ ضمنی الیکشن  تک ترقیاتی پروگرام کا اعلان نہیں کیاجاناچاہئے۔

 

اللہ کا شکر ہے تیل کی قیمتوں میں کچھ کمی آئی،وزیراعظم