خواتین افسران کے موبائل نمبرز فحش ویب سائٹ پر ڈالنے والے قانون کے شکنجے میں

خواتین افسران کے موبائل نمبرز فحش ویب سائٹ پر ڈالنے والے قانون کے شکنجے میں

کراچی (نیاٹائم)خواتین افسران کے موبائل نمبرز فحش ویب سائٹ پرکیوں ڈالے، سرکاری خواتین افسران کے موبائل نمبرفحش ویب سائٹ پرڈالنے والے دھرلیےگئے۔فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی ( ایف آئی اے ) سائبرکرائم ونگ نے پروموشن تنازع پر 35 خواتین افسران کے نمبرز فحش ویب سائٹس پر شیئر کرنے کے الزام (جرم) میں محکمہ سوشل ویلفئیر کے 2 ملازمین کو گرفتارکرلیا۔

 

ایف آئی اے ترجمان کے مطابق محکمہ سوشل ویلفئیر کے دو ملازمین کی جانب سے خواتین کو ہراساں کرنے کی کوشش میں اسسٹنٹ سوشل ویلفیئر آفیسر ثاقب شیخ اور جونئیر کلرک عدیل میمن کوگرفتارکیا گیا ہے۔ایف آئی اے حکام کے مطابق دونوں ملازمین کی گرفتاری 35خواتین افسران کے ذاتی موبائل نمبرز فحش ویب سائٹس پر ڈالنے کے سبب عمل میں آئی ہے، ملزمان نے پروموشن کے تنازع پر خواتین کے نمبر فحش ویب سائٹس پر شیئر کردیے تھے جس کے بعد خواتین کو متعدد مقامات سے ہراسگی کی کالز موصول ہوئیں۔

 

ذرائع کے مطابق حکام نے بتایا کہ فحش ویب سائٹس پر خواتین کے نمبرز کی تشہیر کے سبب انھیں بڑے پیمانے پرآوارہ افرادکی طرف سے ہراساں کیا گیا جس کے باعث وہ شدید ذہنی دباؤ اور اذیت کا شکار بھی رہیں۔سرکاری خواتین ملازمین نے ملزموں کی گرفتاری پرسکھ کاسانس لیتے ہوئے انہیں عبرتناک سزادینے کامطالبہ کیاہے۔

 

ضمنی الیکشن میں ن لیگ کے رہنماء نے ووٹرز کو پیسوں کی پیشکش کردی