فواد چوہدری نے مفت بجلی کے فیصلے پر سپریم کورٹ کو خط لکھ دیا

فواد چوہدری نے مفت بجلی کے فیصلے پر سپریم کورٹ کو خط لکھ دیا

اسلام آباد (نیا ٹائم)پاکستان تحریک انصاف کے سینئر مرکزی نائب صدر فواد چوہدری نے وزیر اعلیٰ پنجاب کی جانب سے 100 یونٹ تک بجلی استعمال کرنے والے صارفین کو مفت بجلی دینے کے اعلان پر سپریم کورٹ کو  خط لکھ دیا ۔

پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما فواد چوہدری نے سپریم کورٹ کو لکھے گئے خط میں کہا ہے کہ پنجاب کو بحران سے نکالنے کیلئے وزیر اعلیٰ نے سیاسی فارمولا لگایا ہے ۔ ان کا یہ فیصلہ عدالتی احکامات کی بھی خلاف ورزی ہے ۔

فواد چوہدری نے اپنے خط میں کہا ے کہ عدالت نے وزیر اعلیٰ پنجاب کو حکم دیا تھا کہ 22 جولائی تک وہ صرف ضابطے کے اختیارات ہی استعمال کریں گے ، تاہم انہوں نے مفت بجلی پیکیج دینے کا جعلی اعلان کیا ہے ۔ جس کا بنیادی مقصد ہی سیاسی فائدہ حاصل کرنا ہے ۔

واضح رہے وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے گزشتہ روز صوبے بھر میں 100 یونٹ سے  کم بجلی استعمال کرنے والے گھریلو صارفین کو مفت بجلی دینے کا اعلان کیا تھا ۔

مفت بجلی دینے کا اعلان کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے کہا تھا کہ جب بجلی کا بل آتا ہے تو غریبوں پر قیامت ڈھاتا ہے ۔ پچھلے 6 ماہ میں جن صارفین نے 100 یونٹ بجلی استعمال کی ہے انہیں  آئندہ پنجاب حکومت مفت بجلی فراہم کرے گی ۔ انہوں نے اعلان کیا تھا کہ اگست سے 100 یونٹس سے کم بجلی استعمال کرنے والے گھروں کا بجلی بل حکومت پنجاب ادا کرے گی ۔

وزیر اعلیٰ پنجاب نے مزید کہا تھا کہ ضرورت مند افراد کو سولر پینل مفت دیں گے ۔ اجالاپروگرام کے تحت ضرورتمندوں کو مفت سولر پینل دئیے جائیں گے ۔، پنجاب میں سستی بجلی فراہمی کیلئے بھی 100 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں جس سے 90 لاکھ خاندان مستفید ہوں گے ۔

 

مریم نواز نے پی ٹی آئی قیادت کو نیا مشورہ دیدیا