جامعہ کراچی میں دھماکہ:انوسٹی گیشن میں اہم پیشرفت سامنے آگئیں

جامعہ کراچی میں دھماکہ:انوسٹی گیشن میں اہم پیشرفت سامنے آگئیں

کراچی(نیاٹائم)جامعہ کراچی میں ہونے والے خودکش اٹیک کی انوسٹی گیشن میں اہم پیشرفت سامنے آئی ہیں۔

 

 سندھ کے انفارمیشن منسٹرشرجیل میمن نے پولیس افسران کی موجودگی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ کراچی میں کالعدم بلوچستان لبریشن فرنٹ(بی ایل ایف)کے کمانڈرکو ہاکس بے سےحراست میں لیاگیا ہے جس نے تفتیش کے دوران انتہائی اہم انکشافات کردیے ہیں اوربتایا کہ وہ کراچی میں بی ایل ایف کے سلیپر سیل کا ہیڈ ہے، جامعہ کراچی دھماکے میں خاتون کے ساتھ ایک اور آدمی تھا، دھماکے کے چارکردار تھے، جن کی ہم نے شناخت کرلی ہے۔

 

شرجیل میمن کا کہنا ہے کہ زیرحراست دہشتگرد نے بتایا ہے کہ وہ اپنی تنظیم کے کمانڈرخلیل بلوچ کی ہدایت پرحساس تنصیبات اور کراچی یونیورسٹی میں چینی اساتذہ کی جاسوسی کرتا رہا، کراچی یونیورسٹی میں خودکش اٹیک کرنے والی خاتون کے خاوند ہیبتان بشیر اور زیب نامی دہشت گرد سے نشستیں ہوئیں اور چینی اساتذہ پراٹیک کو کامیاب کروایا گیا۔

 

بابرغوری کو کیوں گرفتار کیا گیا، تفصیلات سامنے آگئیں