صحافی شیریں ابوعاقلہ کے قتل پرامریکاکامؤقف سامنے آگیا

صحافی شیریں ابوعاقلہ کے قتل پرامریکاکامؤقف سامنے آگیا

واشنگٹن(نیاٹائم ویب ڈیسک)امریکی محکمہ خارجہ کابتانا ہےکہ اسرائیلی فوجی کی  طرف سے الجزیرہ کی خاتون جرنلسٹ پر فائرنگ غیر ارادی طور پر کی گئی ہے۔

 

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق امریکی  محکمہ خارجہ کی طرف سے الجزیرہ کی خاتون صحافی شیریں ابو عاقلہ کی اسرائیلی فورسز کی فائرنگ سے ہلاکت کی انویسٹی گیشن  سے متعلق بیان جاری کیا گیا ہے جس میں امریکی محکمہ خارجہ نےاسرائیلی فوجی کی جانب سے  فائرنگ کو غیر ارادی قرار دیا ہے۔

 

امریکی محکمہ خارجہ کا  بتانا ہےکہ شیریں ابو عاقلہ کی اسرائیلی فوجی کی فائرنگ سے ہلاکت غیر ارادی  طورپر پیش آنے والاواقعہ  ہے تاکہ  آزاد تفتیش کار اس حوالے سے ابھی کسی فائنل  نتیجے پر نہیں پہنچ پائے ہیں۔محکمہ خارجہ نے مزید بتایا کہ امریکی سکیورٹی کو آرڈینیٹر نے اسرائیل ڈیفنس فورس اور فلسطینی اتھارٹی کی انویسٹی گیشن  سے یہ اخذ کیا کہ اسرائیلی فوج کی فائرنگ ہی خاتون صحافی کی موت  کی وجہ بنی ہے۔

  

اس حوالے سے فلسطینیوں کا بتانا ہےکہ  اسرائیلی فوج نے جان بوجھ کر  شیریں ابو عاقلہ کو قتل کیا جبکہ اسرائیل نے اس کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ ہوسکتا ہے خاتون صحافی غلطی سے نشانہ بنی ہوں۔خیال  رہےکہ الجزیرہ کی خاتون صحافی شیریں ابو عاقلہ 11مئی کو مغربی کنارے پر اپنی پیشہ ورانہ ذمہ داریوں کی انجام د ہی کے دوران اسرائیلی فوج کی فائرنگ کا ٹارگٹ  بنیں جس سے وہ زندگی کی بازی ہارگئی تھیں۔

 

امریکی محکمہ خارجہ کا ڈونلڈ لو سے پی ٹی آئی رابطوں پر تبصرے سے گریز