کروڑوں روپے رشوت کے الزام میں پرنسپل سیکرٹری اینٹی کرپشن میں طلب

کروڑوں روپے رشوت کے الزام میں پرنسپل سیکرٹری اینٹی کرپشن میں طلب

لاہور(نیاٹائم) اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ پنجاب نےسابق وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے سابق پرنسپل سیکرٹری طاہرخورشید کو رشوت کے الزام میں پوچھ گچھ کے لیےطلب کرلیا۔

 

اینٹی کرپشن حکام کاکہناہےکہ عثمان بزدارکےسابق پرنسپل سیکرٹری طاہر خورشید پر رشوت ستانی کا الزام ہے اس حوالے سے پوچھ گچھ کے لیے انہیں 6 جولائی کو اپنی صفائی میں ثبوت دینےکےلیے طلب کیا گیا ہے۔

 

حکام کےمطابق طاہر خورشید پر سرکاری منصوبوں میں کروڑوں روپے رشوت وصول کرنے ،اورافسران کی ٹرانسفرپوسٹنگ کے لیے پیسےلینےکا الزام ہے۔

 

اینٹی کرپشن حکام کےمطابق طاہرخورشید پر سڑکوں کے ٹینڈرز کی منظوری دینے کے لیے کروڑوں روپے رشوت کے طورپروصول کرنےکا الزام ہے، ان پر اور وسیم طارق پر پراجیکٹ کےاضافی فنڈزکی منظوری کے لیے بھی کروڑوں روپے رشوت لینے کا الزام لگایا ہے۔

 

وضح رہےکہ اینٹی کرپشن حکام کے مطابق چیف انجینئر سی اینڈ ڈبلیو وسیم طارق کو گزشتہ ماہ اینٹی کرپشن نےگرفتارکیا گیا تھا۔وسیم طارق کی نشاندہی پرسابق پرنسپل سیکرٹری کی گرفتاری عمل میں لانے کافیصلہ کیاگیاہے۔

 

بھارتی طیارے کی کراچی میں اچانک ہنگامی لینڈنگ،وجہ کیابنی؟