پیسوں کی غیرقانونی منتقلی کے کیس میں مونس الہٰی عدالت پیش

پیسوں کی غیرقانونی منتقلی کے کیس میں مونس الہٰی عدالت پیش

لاہور(نیاٹائم) پیسوں کی غیر قانونی منتقلی کے کیس میں سابق وفاقی وزیر مونس الٰہی اور دیگر ملزموں کی عبوری ضمانت میں 14 جولائی تک توسیع کر دی گئی ہے۔

 

لاہور کی بینکنگ کورٹ  نے منی لانڈرنگ کیس میں چودھری مونس الٰہی سمیت تین ملزموں کی عبوری ضمانتوں پر سماعت کی تھی۔ کورٹ  میں مونس الہیٰ ،محمد خان بھٹی اور واجد احمد نے حاضری مکمل کرائی ۔ انویسٹی گیشن  افسر نے کہا کہ ملزم شامل تفتیش ہوچکے ہیں۔

 

عدالت نے انویسٹی گیشن  افسر سے استفسار کیا کہ آپ عدالت کا ٹائم کیوں ضائع کررہے ہیں جس پر انویسٹی گیشن  نے کہا کہ مختلف افراد سے ریکارڈ طلب کیا ہے جسکے بعد تفتیش مکمل ہوجائے گی، 47 فیصد ریکارڈ موصول  کیا جاچکا ہے ۔ عدالت نے تفتیشی افسر کو آئندہ انویسٹی گیشن  مکمل کرنے کی ہدایت کردی اور مونس الہیٰ سمیت دیگر ملزموں  کی عبوری ضمانتوں میں 14 جولائی تک توسیع کردی ہے۔

 

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں مونس الہی کے خلاف کیسزری اوپن ہوئے ہیں جس کے بعد وہ ضمانت پر ہیں اور ان الزامات کو سیاسی انتقام سے جوڑ رہے ہیں،لاہور میں چند روزپہلے میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے راناثناء اللہ کو بھی چیلنج کیا تھا کہ میں ادھر کھڑا ہوں مجھے گرفتارکرکےدکھاؤ،تاہم موجودہ حکومت کی جانب سے کہا گیا کہ مونس الہی پر کیس عمران خان حکومت میں ہی بنایا گیا تھا ہم نے کوئی نیا کیس نہیں بنایا۔

 

لاپتا افراد کا معاملہ،عدالت عالیہ کا وزیراعظم کو طلب کرنے کا عندیہ