ہاکی کھلاڑیوں کو روز گار دینے کا مطالبہ زور پکڑنے لگا

ہاکی کھلاڑیوں کو روز گار دینے کا مطالبہ زور پکڑنے لگا

لاہور(نیا ٹائم) کامن ویلتھ گیمز کی تیاریوں کے سلسلے میں پاکستان ہاکی ٹیم کا ٹریننگ کیمپ لاہور میں جاری ہے مگردولت مشترکہ گیمز کیلئےلگائے جانے والے کیمپ میں بھی پلیئرز روزگار کیلئے فکر مند ہیں۔

 

ہاکی ٹیم کے کپتان عمر بھٹہ کا کہنا ہے کہ  ہماری تمام تر توجہ  تو کھیل پر ہی مرکوز ہے  مگرساتھ ہی ساتھ ہماری  روزگار کی فکربھی  ختم ہونی چاہیے ، پاکستان کی جانب سے  کھیلنا اور ملک کی نمائندگی کرنا ہمارے لیے بہت بڑا اعزاز ہے اور جب یہ اعزاز ملتا ہے تو پھر کوئی اور سوچ نہیں ہوتی کیوں کہ جب پاکستان کیلئے کھیلتے ہیں تو اس سے بڑھ کر کوئی اور چیز نہیں ہو سکتی  مگرمیں سمجھتا ہوں کہ نوکریاں ہوں تو اس سے کھلاڑیوں کے حوصلے  مزیدبلند ہوتے ہیں ۔عمر بھٹہ نے کہا کہ ہماری روایت میں  پلیئرز کیلئے ڈیپارٹمنٹل سپورٹس بہت ضروری ہے، کھلاڑیوں کی تنخواہیں جتنی ہوں گی جتنی نوکریاں ہوں گی کھیلوں  کو بھی اتنا ہی  زیادہ فائدہ ہو گا۔

 

دوسری  جانب  قومی پلیئر اظفر یعقوب کا کہنا تھا کہ ایک کھلاڑی کیلئے سب سے اہم اسکے روزگار کا سلسلہ ہے جب  کوئی کھلاڑی  بیروز گار ہو گا  اور اسے روزگار کی فکر ہو گی تو وہ کیسے اچھے طریقے سے فارم کرے گا، کھلاڑی  اپنے گھر کی فکر کرے گا یا گراؤنڈ میں آکر کھیلے گا۔اظفر یعقوب نے کہا کہ میری وزیر اعظم شہباز شریف سے درخواست ہے کہ ڈپارٹمنٹل سپورٹس کو بحال کیا جائے، پلیئرز کی فکر مندی دور کی جائے تاکہ وہ دولت مشترکہ  گیمز میں اچھا کھیل سکیں اور میڈل جیتیں۔نائب کپتان عماد شکیل بٹ کا کہنا ہے کہ سابقہ حکومت نے ڈیپارٹمنٹس ختم کیے اوراب تک  ہم سن ہی رہے ہیں کہ یہ حکومت بحال کرے گی۔

 

 

حسن علی کی اہلیہ کے قومی ٹیم کے دو پسندیدہ کھلاڑی کونسے ہیں