کراچی ڈیفنس میں وارداتیں کرنے والا 5 رکنی گروہ گرفتار

کراچی ڈیفنس میں وارداتیں کرنے والا 5 رکنی گروہ گرفتار

کراچی (نیا ٹائم)کراچی کے پوش علاقے ڈیفنس کے بنگلوں میں ڈکیتی اور نقب زنی کی وارداتیں کرنے والا 5 رکنی گروہ گرفتار ، درخشاں پولیس نے کئی روز کی مسلسل جدوجہد کے بعد ملزموں کو گرفتار کیا ۔

پولیس ذرائع کے مطابق کچے  کے علاقے سے تعلق رکھنے والے 5 رکنی گروہ نے منصوبہ بندی کے تحت ڈیفنس میں ایک بنگلہ کرائے پر حاصل کر رکھا تھا ،ملزم بنگلے میں رہائش  رکھ کے اطراف کے بنگلوں کی ریکی کر کے خالی بنگلوں میں رات کے اندھیرے میں داخل ہو کر واردات کر کے اپنی رہائش گاہ پر چلے جاتے ۔

ڈی آئی جی ساوتھ شرجیل کھرل کی ہدایت پر ایس ایس ایس پی ساوتھ انوسٹی گیشن کی سربراہی میں پولیس ٹیم تشکیل دی گئی جنہیں ملزموں کا سراغ لگا کر جلد از جلد گرفتار کرنے کا ٹارگٹ دیا گیا ۔

ایس پی درخشاں اور سب انسپکٹر درخشاں راو رفیق نے کئی روز کی طویل جدوجہد کے بعد ملزموں کا سراغ لگایا کہ وہ ڈیفنس کے ایک بنگلے میں رہائش پذیر ہیں ۔جو رات کی تاریکی میں نکل کر اطراف کے بنگلوں میں واردات کر کےواپس اپنے بنگلے پر پہنچ جاتے ہیں  ۔

پولیس ٹیم نے اتوار کی صبح ملزموں کے بنگلے پر چھاپہ مار کر 5 رکنی ڈکیتی گروہ کو گرفتار کر کے ان کے قبضے سے بھاری مالیت کی طلائی چوڑیاں ، انگوٹھیاں ،کنگن ، چین ، بالیاں ، بندے ، پازیبیں ، دستی گھڑیوں سمیت موبائل فونز اور دیگر سامان بھی برآمد کر لیا ۔

سب انسپکٹر درخشاں راو رفیق نے بتایا ہے کہ گرفتار ملزموں میں سخاوت گوپانگ ، عابد ، شہباز خان ، کامران اور عمران شامل ہیں ۔ ملزم اطراف کے بنگلوں میں ڈرائیور ، خانسامہ اور چوکیدار کی نوکری کرنے کے بعد وارداتیں کرتے تھے ۔

ملزموں کے خلاف ڈیفنس کی حدود میں مختلف تھانوں میں چوری ، نقب زنی کے 12 سے زائد مقدمات درج ہیں ۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزموں کا تعلق رحیم یار خان کے کچے کے علاقے سے ہے اور وہ کراچی کے پوش علاقوں میں ڈکیتی و رہزنی  کی وارداتیں کرتے تھے ۔ گزشتہ ایک سال سے وہ کراچی میں روپوش تھے ۔ پانچوں ملزم عادی جرائم پیشہ ہیں جو مختلف روپ دھار کر چوری اور ڈکیتی کی وارداتیں کرتے تھے ۔

 

خاتون مسافر بس میں مبینہ زیادتی کا شکار