اپردیر میں ہیضہ کی وبا پھوٹنے پر محکمہ صحت کا فوری ایکشن

اپردیر میں ہیضہ کی وبا پھوٹنے پر محکمہ صحت کا فوری ایکشن

پشاور(نیاٹائم)ڈائریکٹرپبلک ہیلتھ کا کہنا ہے کہ اپردیر میں دو دن سے ہیضے کی وبا کی شکایات موصول ہورہی تھیں جس کے بعد محکمہ صحت نے فوری ایکشن لیا۔           

 

ڈائریکٹرپبلک ہیلتھ نے بتایا کہ ایم ایس اور ڈی ایچ او پہلے ہی متعلقہ علاقے میں موقع پر موجود تھیں، انٹیگریٹڈ ڈیزیز سرویلنس اینڈ ریسپانس یونٹ نے بھی اپر دیرکا دورہ کیا۔ علاقے سے مریضوں کے نمونے لیکر تجزیے کیلئے پبلک ہیلتھ ریفرنس لیب روانہ کردیے گئے،ٹی ایم اے سمیت ضلعی انتظامیہ و متعلقہ محکموں کو بھی آگاہ کردیا گیا ہے۔

 

 انہوں نے مزید بتایا کہ ٹی ایم اے اور ضلعی انتظامیہ کی مدد سے پانی کے ذخائر کی کلورینیشن کرادی گئی، متاثریں کیلئے بیس بستروں پر مشتمل علیحدہ وارڈ قائم کیے گئے ہیں۔متاثرین کو مفت طبی امداد اور وبا کے بارے آگاہی  کی سہولت بروقت فراہم کی جارہی ہے۔ محکمہ صحت کے فوری ایکشن سے وبا کے پھیلاو کو محدود کردیا گیا ہے۔

 

 وبا کے پھیلاو کے پیش نظر متاثرہ علاقے میں لوگوں کا آنا جانا محدود کردیا گیا ہے، اب تک صرف پچاس افراد میں مبینہ ہیضہ کی شکایات پائی گئیں ہیں ۔وبا متاثرہ علاقے میں آلودہ پانی پینے سے پھیلی، ملاکنڈ ڈویژن میں آلودہ پانی پینے سے متاثرین کی حالت غیر ہونے کا یہ دوسرا واقع ہے، اس سے قبل ضلع ملاکنڈ کے علاقے آگرہ میں واقع پیش آیا تھا۔

 

کورونا سے مزید دو افراد زندگی سے محروم ہوگئے