مولانا فضل الرحمن کے قریبی ساتھی نیب کورٹ سے باعزت بری

مولانا فضل الرحمن کے قریبی ساتھی نیب کورٹ سے باعزت بری

پشاور (نیا ٹائم) نیب کو ایک اور کیس میں سبکی کا سامنا ، آمدنی سے زائد اثاثہ جات رکھنے کے ریفرنس میں مولانا فضل الرحمن کے قریبی ساتھی کو عدالت نے باعزت بری کر دیا ۔

عدالت نے مولانا فضل الرحمان کے قریبی ساتھی موسیٰ خان کو آمدنی سے زائد اثاثے رکھنے کے ریفرنس میں بے گناہ قرار دیتے ہوئے بری کردیا ۔

جمیعت علمائے اسلام کے سربراہ   مولانا فضل الرحمن کے قریبی ساتھی اور سابق ڈسٹرکٹ فاریسٹ آفیسر موسیٰ خان کو نیب عدالت نے بے گناہ قرار دیتے ہوئے بری کر دیا ۔ نیب نے 2020 ء میں سابق ڈی ایف او موسیٰ خان کو آمدن سے زائد اثاثہ جات کے کیس میں گرفتار کیا تھا ۔

مختصر عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ نیب کی طرف سے  سرکاری افسر موسیٰ خان سمیت دیگر چار افراد کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنس دائر کیا گیا تھا ، تاہم نیب حکام ریفرنس میں لگائے گئے الزامات ثابت کرنے میں ناکام رہا ، جس کی بنا پر موسیٰ خان سمیت دیگر ملزموں کو بے گناہ قرار دیتے ہوئے باعزت بری کیا جاتا ہے ۔

واضح رہے موسیٰ خان کی گرفتاری کے وقت نیب حکام نے انہیں سربراہ جمیعت علمائے اسلام مولانا فضل الرحمن کا مبینہ فرنٹ مین بھی قرار دیتا تھا اور کہا جا رہا تھا کہ ان کی گرفتاری سے مولانا فضل الرحمن کے خلاف شواہد سامنے آئیں گے ۔

 

وزیراعلی پنجاب کے انتخاب کا تحریری فیصلہ جاری