دعا زہرہ کیس کراچی پولیس کے بجٹ پر بھاری پڑ گیا

دعا زہرہ کیس کراچی پولیس کے بجٹ پر بھاری پڑ گیا

کراچی (نیا ٹائم)لاہور کے نوجوان سے شادی کرنے والی شہر قائد کی کمسن لڑکی دعا زہرہ کے مبینہ اغوا کا کیس ، کراچی پولیس کے بجٹ پر بھاری پڑ گیا ، دعا زہرہ کی تلاش ، بازیابی ، عدالتوں میں پیشیوں اور میڈیکل رپورٹس میں سندھ پولیس کے 30 لاکھ روپے لگ گئے ، اخراجات کا سلسلہ اب بھی جاری ہے ۔

پولیس ذرائع کے مطابق کراچی میں دعا زہرہ کے اغوا کے مقدمہ کی تفتیش میں عدالتی احکامات پر پولیس کی گزشتہ کئی روز سے دوڑیں لگی ہوئی ہیں ، دعا زہرہ کی بازیابی کیلئے سندھ پولیس پنجاب بھر میں چھاپے بھی مارتی رہی ۔

کراچی سے ڈی آئی جی سی آئی اے ، اینٹی وائلنٹ کرائم سیل کے ایس ایس پیز سمیت دیگر پولیس افسران کی ٹیمیں دعا زہرہ کی بازیابی کیلئے لاہور ، اسلام آباد کشمیر سمیت خیر پختونخوا کی بھی خاک چھانتے رہے ۔

سندھ پولیس پارٹیوں کو کئی بار لاہور میں کئی کئی ہفتے قیام کرنا پڑا ، ایک پولیس پارٹی نے مانسہرہ میں بھی 20 دن تک قیام کیا ، جبکہ سندھ پولیس کی ایک پارٹی کوآزاد کشمیر کا بھی سفر کرنا پڑا ۔ ایس ایس پیز پنجاب کے چکر لگاتے رہے ، ڈی آئی جی سی سیل آئی اے کو دو مرتبہ پنجاب م، اسلام آباد میں بھی پڑاو ڈالنا پڑا ۔

پولیس ذرائع کے مطابق گزشتہ ہفتے کی کارروائیوں پر سندھ پولیس کا سب سے زیادہ خرچ پولیس افسران کے کراچی سے مختلف شہروں کیلئے ہونے والے ہوائی سفر پر آیا ۔

اندازے کے مطابق جون کے آخری ہفتے تک کراچی پولیس کے دعا زہرہ کیس پر 25 لاکھ روپے کے اخراجات ہو چکے تھے جن میں سے 20 لاکھ سے زائد کی ادائیگی آئی جی سندھ کی طرف سے کی جا چکی ہے ۔

پولیس ذرائع کے مطابق عدالتی حکم پر دعا زہرہ کے کراچی میں دوبارہ میڈیکل کروانے کے سلسلہ میں بھی ہوائی سفر اور قیام و  طعام کے سلسلہ میں لاکھوں روپے کے اخراجات ہو چکے ہیں ۔

پولیس ذرائع کے مطابق مقدمہ کے تفتیشی افسر کی طرف سے تاحال مقدمے پر آنے والے خرچ کا مکمل بل جمع نہیں کروایا گیا ہے ، تاہم تفتیشی افسر کی طرف سے سفری اخراجات ، میڈیکل رپورٹس ، فرانزک اور دیگر اخراجات کا تخمینہ لگایا جا رہا ہے ۔

 

دعا زہرا کی عمر کے تعین کے لیے میڈیکل بورڈ تشکیل