"انتقال"کر جانے والا شخص اپنی بیٹی کی شادی میں پہنچ گیا

نئی دہلی (نیا ٹائم ویب ڈیسک) بھارتی دوشیزہ دلہن بنی تو اسٹیج پر اپنے "مرحوم والد" کو دیکھ کر ہکا بکا رہ گئی جس کے بعداس نے  خوشی سے  اپنے باپ کو گلے لگا لیا۔

 

بین الاقوامی  میڈیا  رپورٹس کے مطابق انڈین  ریاست حیدرآباد میں دلہن سائی وشنوئی کے والد ایک سال  پہلے کورونا میں مبتلا ہوکر دنیا سے چل بسے تھے اور شادی کے موقع پردلہن  اپنے والد کو یاد کرکے بہت اداس تھی جسے اس کے بھائی  کی جانب سے ایسا انوکھا تحفہ دیا  گیا کہ دلہن سمیت تمام خاندان والے  جذباتی ہوگئے۔دلہن کے بھائی نے شادی کے دن سٹیج پر والد کا مومی مجسمہ بنوا کر رکھ دیا جسے دیکھ کر دلہن اور ماں پہلے تو حیران  رہ گئے  تاہم بعد میں  رونے لگے۔سماجی رابطوں پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ دلہن اپنے والد کے گال پر بوسہ دیتی ہے  جس کے بعد مومی مجسمے کواپنے  گلےسے  لگاتی ہے۔

 

میڈیارپورٹس کے مطابق مومی مجسمہ ریاست کرناٹک میں تیار کیا گیا جس کی تیاری میں ایک سال سے زیادہ کا عرصہ  لگا۔سائی وشنوئی کااس موقع پر کہنا تھا کہ آج کا دن انکی زندگی کا یاد گار دن تھا اور ہر لڑکی کی طرح میری بھی خواہش تھی کہ میرا باپ بھی میرے ساتھ ہوتا  مگر میرے بھائی نے جو سرپرائز مجھے دیا اس سے مجھے واقعی ہی لگا جیسے میرا باپ میری شادی میں موجودہے۔دلہن کے بھائی کا کہنا تھا کہ انکے باپ کے انتقال کے بعد اسکی بہن ہر وقت انہیں یاد کر کے روتی رہتی تھی کہ کاش میرے بابا میری شادی والے روز میرے ساتھ ہوتے اس لیے میں انکو واپس تو نہیں لا سکتا تھا مگر اپنی بہن کی خوشی کیلئے میرے ذہن میں یہی آئیڈیا  آیا تھا۔

 

 

ایسا ریسٹورانٹ جہاں گاہکوں کو بد دعائیں دی جاتی ہیں