عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی کا پاکستان پر کیا اثر ہو گا ؟

عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی کا پاکستان پر کیا اثر ہو گا ؟

کراچی (نیا ٹائم)عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی کا سلسلہ آج دوسرے روز بھی جاری رہا ، کیا عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی سے پاکستانی صارفین کو کوئی ریلیف ملے گا یا نہیں ؟ یکم جولائی سے حکومت پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے حوالے سے کوئی گنجائش پیدا کرے گی یا نہیں ؟

پٹرولیم مارکیٹ کی اونچ نیچ سمجھنے والے ماہرین کے مطابق عالمی مارکیٹ میں قیمتیں گرنے سے توقع ہے کہ حکومت یکم جولائی سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ نہیں کرے گی ، ایک عام اندازے کے مطابق عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت 10 فیصد کم ہونے پر پاکستانی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 22 روپے فی لیٹر تک کمی ہو سکتی ہے ۔ تاہم ماہرین کا ماننا ہے کہ حکومت کے پاس گنجائش تو موجود ہے مگر اتنی نہیں کہ وہ پٹرولیم لیوی کے 50 روپے کسی طرح ایڈجسٹ کر سکے اس لیے انہیں قیمت میں اضافہ کرنا پڑے گا ۔

ایک اور ماہر نے خام تیل کے بجائے ڈیزل اور پٹرول کی قیمت کا مقامی قیمت پر متوقع اثر کا اندازہ لگاتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت اگر 100 ڈالر سے کم ہو گئی تومقامی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی ہو سکتی ہے تاہم حکومت قیمتوں میں کمی کے بجائے پٹرولیم مصنوعات کی قیمت برقرار رکھ کر پٹرولیم لیوی اور جی ایس ٹی کے اہداف پورے کرے گی ۔

ملک میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے حوالے سے خام تیل کی عالمی قیمت اور ڈالر کی قدر سے بھی مشروط ہے تاہم اب دیکھنا ہے کہ حکومت اس حوالے سے کیا حکمت عملی اپناتی ہے ۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کے حوالے سے اگلا نوٹیفکیشن  اگلے ہفتے آنے کی توقع ہے ۔

 

پاکستان میں فی تولہ سونا کی قیمت میں ریکارڈکمی