وفاقی دارالحکومت میں معمول سے زیادہ بارشوں کا امکان

وفاقی دارالحکومت میں معمول سے زیادہ بارشوں کا امکان

اسلام آباد (نیا ٹائم) محکمہ موسمیات نے پیشگوئی کی ہے کہ وفاقی دارالحکومت میں معمول سے زیادہ مون سون بارشوں کا امکان ہے ، جولائی سے اگست کے درمیان شہر میں موسلا دھار بارشیں ہو سکتی ہیں ۔

وفاقی وزیر ماحولیاتی تبدیلی شیری رحمان نے خبردار کیا ہے کہ معمول سے زیادہ بارشوں کے باعث ملک میں 2010 کے تباہ کن سیلاب جیسی صورتحال دوبارہ پیدا ہو سکتی ہے ۔ دوسری جانب ضلعی انتظامیہ نے دعویٰ کیا ہے کہ ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کی پوری تیاری کر لی گئی ہے ۔ تاہم گزشتہ سال سیکٹر ای الیون ٹو میں ماں بیٹے کی ہلاکت کا باعث بننے والی نالے پر بنی تجاوزات اب بھی موجود ہیں ۔

گزشتہ سال اسلام آباد میں موسلا دھار بارش سے اسلام آباد کے پوش علاقے ای الیون ٹو میں بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی تھی ، جبکہ ایک گھر کی بیسمنٹ میں پانی بھرنے سے ماں بیٹا جاں بحق ہو گئے تھے تاہم گھر میں باقی تین بچوں کو بچا لیا گیا تھا ۔ اس واقعہ کی بنیادی وجہ برساتی نالے پر قائم کی گئی ایک نجی ہاوسنگ سوسائٹی کی تجاوزات کو قرار دیا گیا تھا جس کی وجہ سے نالے کا راستہ تنگ ہو گیا تھا جس سے برساتی پانی اوور فلو ہونے کے بعد  کر گھروں میں داخل ہوا۔

ضلعی انتظامیہ کا دعویٰ ہے کہ گزشتہ سال سانحہ کا باعث بننے والی تجاوزات اب بھی موجود ہیں جبکہ نجی ہاوسنگ سوسائٹی نے عدالت نے سٹے آرڈر لے رکھاہے اور مقامی افرادگزشتہ سال بارش سے ہونے والی تباہی کے باعث اب بھی خوفزدہ ہیں ۔

ڈی سی اسلام آباد عرفان میمن کے مطابق 100 ملی میٹر سے زیادہ بارش ہونے کی صورت میں نشیبی علاقوں میں بیسمنٹس کو سیل کیا جائے گا اور ضرورت پڑنے پر انہیں  خالی بھی کرایا جائے گا ۔

اسلام آباد انتظامیہ نے دعویٰ کیا ہے کہ شہر کے تمام نالوں کی صفائی مکمل کر لی گئی ہے لیکن حقیقت اس کے برعکس دکھائی دیتی ہے ، برساتی نالوں میں کئی مقامات پر اب بھی کچرا موجود ہے ۔

 

کراچی میں تیز ہواوں کے ساتھ بادل برس پڑے