خیبرپختونخوا میں لمپی سکن وائرس بےقابوہوگیا

خیبرپختونخوا میں لمپی سکن وائرس بےقابوہوگیا

پشاور(نیاٹائم) خیبرپختونخوا میں 2 مہینے میں لمپی سکن کے 5 ہزار سے زیادہ کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں۔

 

ڈائریکٹرجنرل لائیو سٹاک ڈاکٹرعالم زیب نےایک ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ مویشیوں میں لمپی سکن کے کیسز سامنے آنے کے بعد مینجمنٹ ویٹرنری ٹیم  کی مدد سے  ترکی سے امپورٹ ویکسین کے 50 ہزارٹیکے جانوروں کو لگوا چکی ہے۔

 

انہوں نے کہا کہ لمپی سکن سےمویشیوں میں شرح اموات ایک سے 5 فی صد تک ہے جبکہ لمپی سکن سے متاثرہ جانور کا گوشت اور دودھ قابل استعمال ہے مگراس بیماری سے  مویشیوں میں دودھ کی پیداواراور کھال متاثر ہوتی ہے البتہ لمپی سکن جانوروں سے انسانوں کو شفٹ نہیں ہوتی ہے۔ 

 

ڈاکٹر عالم زیب کا بتانا تھا کہ خیبرپختونخوا  میں 2 مہینے میں لمپی سکن کے 5 ہزار 341 کیسز سامنے آچکے ہیں، بیماری کی روک تھام کیلئے بین الاضلاعی اور بین الصوبائی سرحدوں پر 56 چیک پوسٹیں بنائی گئی ہیں اور چیک پوسٹوں پر جانوروں کی منتقلی  پر نظر رکھی جا رہی ہے۔یادرہےکہ لمپی سکن کا پہلا کیس 22 اپریل کو ڈیرہ اسماعیل خان میں سامنے آیا تھا۔

 

وزارت داخلہ کاکھاد سمگلروں اورذخیرہ اندوزوں کیخلاف بڑاحکم