افغان طالبان کے 2 اہم عہدیداروں کے بیرون ملک سفر پر پابندی

افغان طالبان کے 2 اہم عہدیداروں کے بیرون ملک سفر پر پابندی

نیو یارک / کابل (نیا ٹائم ویب ڈیسک)اقوام متحدہ نے طالبان کے دو سینئر اہم عہدیداروں کے بیرون ملک سفر پر پابندی عائد کر دی ، وزراء اب بیرون ملک سفر نہیں کر سکیں گے ۔
اقوام متحدہ کی جانب سے طالبان کے وزیر برائے اعلیٰ تعلیم عبدالباقی حقانی اور نائب وزیر تعلیم سید احمد شاد خیل کے سفری استثنیٰ کو ختم کر دیا گا ہے جس کے بعد دونوں رہنما بیرون ملک سفر نہیں کر سکیں گے ۔
غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اقوام متحدہ کے سفارتکاروں کا کہنا ہے کہ طالبان رہنماوں کے بیرون ملک سفری پر پابندیاں طالبان حکومت کی جانب سے افغان خواتین پر سخت پابندیاں لگانے کی وجہ سے عائد کی گئی ہیں ۔
طالبان عہدیداروں کے مذاکرات کیلئے بیرون ممالک سفر کا استثنیٰ کل ختم ہو گیا ہے ، اقوام متحدہ کی جانب سے طالبان کابینہ کے باقی 13 عہدیداروں کے سفری استثنیٰ میں 2 ماہ کیلئے توسیع کی گئی ہے ۔
دوسری جانب افغان نائب وزیر برائے اعلیٰ تعلیم لطف اللہ خیر خواہ نے اقوام متحدہ کے فیصلے کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اسے سطحی اور غیر منصفانہ قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ ایسے فیصلوں سے صورتحال مزید نازک ہو جائے گی ۔
واضح رہے طالبان حکومت نے مارچ میں لڑکیوں کے سیکنڈری سکولز بند کروائے گئے تھے جو ابھی تک دوبارہ نہیں کھولے جا سکے ہیں ۔

 

یوکرینی صدرنے روس کی جانب سے حملوں میں اضافے کے خدشے کا اظہارکردیا