شاہ محمود قریشی کا فیٹف کے حوالے سے اہم بیان

شاہ محمود قریشی کا فیٹف کے حوالے سے اہم بیان

ملتان(نیا ٹائم)پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین و سابق وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا فیٹف (FATF ) کے حوالے سے اہم بیان سامنے آیا ہے۔

 

اپنے ایک بیان میں شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ جب ہم فیٹف کے حوالے سے قانون سازی کر رہے تھے تو پاکستان پیپلز پارٹی اور نون لیگ دونوں اس عمل سے گریزاں تھیں،جب ہم نے انہیں قائل کرنے کی کوشش کی کہ فیٹف کے حوالے سے قانون سازی، ملکی مفاد میں ہے تو انہوں نے این آر او 2 ہمارے سامنے رکھ دیا، سمجھ سے بالاتر ہے کہ موجودہ حکومت اس قانون سازی کی مخالفت کے باوجود آج کس بات کا کریڈٹ لینے کی کوشش کر رہی ہے۔

 

انہوں نے کہا کہ دونوں جماعتوں نے شرط عائد کی کہ اگر ہمیں نیب کے کیسز میں ریلیف ملے گا تو ہم فیٹف کے خلاف اس قانون سازی میں آپ کا ساتھ دیں گے ورنہ نہیں دیں گے،اس حوالے سے جتنا ایکشن پلان تھا وہ ہمارے دور میں مکمل ہوا جس کی بنیاد پر پلینری سیشن میں انہوں نے فیصلہ کیا کہ  سائیٹ وزٹ کے بعد گرے لسٹ کے حوالے سے حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔اس کی منصوبہ بندی، انتظامی نوعیت کے اقدامات اور قانون سازی تو پاکستان تحریک انصاف کے دور حکومت میں ہوئی۔

 

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ یہ کس منہ سے اس کا کریڈٹ لینے کی کوشش کر رہے ہیں،اس حوالے سے حماد اظہر صاحب نے، وزارت خزانہ اور وزارت خارجہ نے مل کر ایک متفقہ لائحہ عمل اپنایا، اور انتھک کوششیں کیں، ہمارے عسکری ادارے کے متعلقہ حکام اور اسٹیٹ بنک کے لوگوں نے بہت تعاون کیا،فاٹف نے جتنے بنچ مارک متعین کیے تھے الحمدللہ ہم نے ان پر تسلی بخش پیش رفت کی،مجھے امید ہے کہ فاٹف کی ٹیم اپنے وزٹ کے دوران اس مثبت پیش رفت کو دیکھتے ہوئے، مثبت فیصلہ کریگی۔

 

کپتان کے قتل کی منصوبہ بندی