• Friday, 30 September 2022
پنجاب  کے سرکاری ملازمین کی

پنجاب  کے سرکاری ملازمین کی "پانچوں انگلیاں گھی میں "

لاہور (نیا ٹائم)وفاق کے بعد پنجاب حکومت نے بھی سرکاری ملازمین کو بڑی خوشخبری سنا دی ، پنجاب کی صوبائی کابینہ نے گریڈ ایک سے 19 تک کے سرکاری ملازمین کی تنخواہ 15 فیصد بڑھانے کی منظوری دے دی ۔

سرکاری ملازمین کو تنخواہ میں 15 فیصد اضافے  کے ساتھ ساتھ 15 فیصد ڈسپیریٹی الاونس بھی دیا جائے گا جس سے مجموعی طور پر تنخواہوں میں اضافہ 30 فیصد ہو جائے گا ۔

پنجاب کے صوبائی بجٹ میں صوبائی حکومت کے ریٹائرڈ سرکاری ملازمین کی پنشن میں بھی 5 فیصد اضافے کیا جائے گا ۔

پنجاب کے بجٹ میں تین ہزار 226 ارب روپے کا بجٹ " روشن راہیں نیا سویرا" کے نام سے رکھے گئے ہیں ، بجٹ میں ترقیاتی پروگرام کیلئے 4991 سکیموں کیلئے 685 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں ۔ صحت کارڈ کیلئے 125 ارب روپے رکھے گئے ہیں جبکہ جنوبی پنجاب کیلئے 31٫5 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں ۔ پنجاب کے بجٹ میں لیپ ٹاپ سکیم کیلئے ڈیڑھ ارب روپے رکھنے کی تجویز دی گئی ہے ۔

واضح رہے اس سے قبل وفاقی حکومت کی طرف سے بھی بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 15 فیصد اضافے کا اعلان کیا گیا تھا ، جبکہ صوبائی بجٹ میں 15 فیصد ڈسپریٹی الاونس شامل کر کے مجموعی اضافہ 30 فیصد ہو جائے گا ۔

 

نیپرانےبجلی کے فی یونٹ میں 4روپے اضافےکی منظوری دے دی