وفاقی حکومت کا بڑا یوٹرن ، کھاد کی قیمت میں کمی کا نوٹیفکیشن چوتھے روز واپس

وفاقی حکومت کا بڑا یوٹرن ، کھاد کی قیمت میں کمی کا نوٹیفکیشن چوتھے روز واپس

اسلام آباد (نیا ٹائم )نئی اتحادی وفاقی حکومت نے بھی اپنے فیصلے پر یوٹرن لے لیا ، وفاقی حکومت کی طرف سے کھاد کی قیمت میں کمی کا نوٹیفکیشن چوتھے روز ہی واپس لے لیا گیا ۔

وفاقی حکومت کی طرف سے جاری کئے گئے اعلامیہ کے مطابق کھاد کی قیمت کم کرنے کا نوٹیفکیشن واپس لینے کا فیصلہ فوری طور پر نافذ العمل ہو گا اور کھاد کی قیمت م،مقر کرنے کا نوٹیفکیشن واپس کیلئے کیلئے ایس آر او بھی جاری کر دیا گیا ہے ۔

وفاقی حکومت کے اعلامیہ کے مطابق کھاد کے 50 کلو تھیلے کی قیمت 1768 روپے مقرر کی گئی تھی اور کھاد کا یہ ریٹ 7 جولائی 2022 ء تک کیلئے مقرر کیا گیا تھا ، جس پر چوتھے روز ہی حکومت نے یو ٹرن لیتے ہوئے نوٹیفکیشن واپس لینے کا اعلان کر دیا ہے ۔

واضح ہے حکومت نے چار روز قبل کھاد کی سرکاری قیمت مقرر کرتے ہوئے کسانوں کو کھاد کی قیمت میں 389 روپے کا ریلیف دیا تھا ۔ اب حکومت کی طرف سے نوٹیفکیشن واپس لینے کے بعد کھاد کا 50 کلو کا تھیلا پرانی قیمت پر دستیاب ہو گا ۔

واضح رہے اس سے قبل موجودہ حکومت اپنے اپوزیشن دور میں حکومت کی طرف سے کسی فیصلے کو واپس لینے پر سخت تنقید کرتے ہوئے اسے یوٹرن قرار دیتی رہی تھی تاہم اب خود چار دن بھی اپنے جاری کردہ نوٹیفکیشن پر قائم نہیں رہ سکی ۔

 

منگلا اور تربیلا ڈیم میں پانی ڈیڈ لیول تک پہنچ گیا