روس نے فن لینڈ کی مشکلات میں اضافہ کردیا

روس نے فن لینڈ کی مشکلات میں اضافہ کردیا

ماسکو(نیاٹائم)روس نے یوکرین کے بعد فن لینڈ کیلئے بھی مشکلات پیدا کرنے کا خواہاں ہے اسی تناظر میں روس نے فن لینڈ کو مزید گیس مہیا کرنے کا عمل روک دیا ہے۔

 

فن لینڈ میں توانائی کی سرکاری کمپنی کے مطابق روس اب فن لینڈ کو قدرتی گیس نہیں دے گا۔ گیس کی سپلائی اب بالٹک کنیکٹر پائپ لائن کے ذریعے یقینی بنایا جارہا ہے۔ جو فن لینڈ اورایسٹونیا کو منسلک کرتی ہے۔روس کا فن لینڈ سے مطالبہ تھاکہ وہ گیس کے بل روسی کرنسی روبل میں دے۔تاہم انہوں روس کے اس مطالبے کو ماننے سے انکار کردیا۔

 

اس سے پہلے روس پولین اور بلغاریہ کو بھی گیس کی سپلائی بند کرچکا ہے۔دوسری طرف فن لینڈ نیٹو الائنس میں شمولیت کی باضابطہ درخواست کرچکا ہے۔ جس کے چند دن بعد گیس کی فراہمی روک دی گئی تھی۔ فن لینڈ نے یہ فیصلہ یوکرین پر روسی اٹیک کے بعد سکیورٹی خدشات کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا ہے۔ روس نے فن لینڈ اور سویڈن کے نیٹو میں شمولیت کے فیصلے کو کافی ناپسند کیا ہے۔

 

روسی صدرنے خبرکیا تھا کہ سویڈن اورفن لینڈ کی نیٹو میں شمولیت پرہم کو کوئی خطرہ یا پرابلم نہیں ہے لیکن ان ممالک میں فوجی تنصیبات کی توسیع پر روس اپنی طاقت کا مظاہرہ کرسکتا ہے اورکرے گا۔

 

روس نےجرمنی اوراٹلی کو بھی گھٹنےٹیکنےپرمجبورکردیا