سہواگ نے اپنی توپوں کا رخ کوہلی کی جانب موڑ دیا

سہواگ نے اپنی توپوں کا رخ کوہلی کی جانب موڑ دیا

نئی دہلی(نیاٹائم)شعیب اخترکے بعد بھارتی کرکٹ ٹیم کے سابق اوپنر سہواگ نے اسٹارکرکٹر ویرات کوہلی کو شدید تنقید کا نشانہ بناڈالا۔

 

بھارتی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق سابق جارحانہ انداز اپنانےوالے اوپنر وریندر سہواگ نے اپنے حالیہ بیان میں ویرات کوہلی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اپنے دور میں فیوچرز اسٹارزکو موقع فراہم نہیں کیا، وہ کچھ کھلاڑیوں کی حمایت کرتے تھے مگر کچھ کو بالکل نظر اندازکرتے رہے۔

 

سہواگ نے بھارتی کرکٹ بورڈ (بی سی سی آئی) کے موجودہ صدر ساروو گنگولی کو کوہلی سے بہترین کپتان قرار دیا اور کہا کہ ساروو گنگولی نے ایک نئی ٹیم بنائی تھی، مجھ سمیت یووراج سنگھ، ہربھجن سنگھ اور ظہیر خان جیسے مستقبل کے سپر اسٹارز کو ٹیم میں کھیلنے کا موقع دیا اور پھر اپنے کھلاڑیوں کی ہرطرح سے حمایت کی۔

 

انہوں نے کہا کہ بہترین کپتان وہ ہوتا ہے جو ٹیم تشکیل دیتا ہے، اپنے کھلاڑیوں کے ساتھ کھڑا ہوتا ہے اور ان کے اندر جیت کا جذبہ بڑھاتا ہے۔ویرات کوہلی کی کپتانی میں بھارتی ٹیم کو بڑا آئی سی سی ایونٹ اپنے نام کرنے میں کامیابی نہیں ہوسکی البتہ انکی قیادت میں ٹیم نے سب سے زیادہ انٹرنیشنل میچز میں کامیابی کا اعزاز حاصل کررکھا ہے۔

 

سابق بھارتی کپتان بری پرفارمنس کی وجہ سے لگا تارتنقید کی زد میں ہیں انہوں نے آئی سی سی ٹی20 ورلڈکپ میں بدترین پرفارمنس کے بعد کپتانی کو چھوڑ دیا تھا، بعد ازاں ان کو ون ڈے ٹیم کی کپتانی سے ہٹا کر روہت شرما کو یہ ذمہ داری سپرد کی گئی تھی اور پھر رواں سال میں جنوبی افریقا کے ہاتھوں ٹیسٹ سیریز میں شکست کے بعد کوہلی نے ٹیسٹ ٹیم کی کپتانی سے بھی استعفیٰ دیدیا تھا۔

 

غیرقانونی بالنگ ایکشن پر شعیب اختر کا سہواگ کو جواب