عوام ہوجائے تیار، حکومت نے سبسڈی کم کرنے کا منصوبہ بنا لیا

عوام ہوجائے تیار، حکومت نے سبسڈی کم کرنے کا منصوبہ بنا لیا

اسلام آباد(نیاٹائم)پاکستان اورعالمی مالیاتی فنڈز(آئی ایم ایف)کےمابین مذاکرات میں حکومت نے بجلی اورتیل پردی جانے والی سبسڈی میں کمی لانے کی یقین دہانی کروادی ہے۔

 

پاکستان اورآئی ایم ایف کے مابین بروز جمعہ 20 مئی کو ہونے والے دوحہ نشست کے دوران پیٹرول مرحلہ وار مہنگا کرنے کا پلان ترتیب دیا ہے۔ ذرائع کےمطابق پیٹرول کی سبسڈی کوغریب طبقات تک محدود کرنے کیلئے بھی تجاویز دی گئیں۔ ٹیبل ٹاک کے دوران بجلی کے نقصانات کم کرنے پربھی گفتگوہوئی، بجلی مہنگی کرنے کیلئے مرحلہ وارطریقہ کارپرغور بھی ہوا۔

 

حکومتی اورآئی ایم ایف وفد نے اس مالی سال 2022-2023 کے بجٹ اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کے ڈیٹا پربھی تفصیلی بات چیت کی، پاکستان نے آئی ایم ایف کواخراجات میں کمی کے لیے حکمت عملی بتائی، جبکہ غیرضروری اخراجات میں کمی کیلئے مختلف تجاویز پربھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات میں ترقیاتی بجٹ کی ترجیحات پربھی غورکیا گیا۔ دوحا میں ہونے والے راؤنڈ میں حکومت نے سوموارسے پہلے بجلی اورتیل پرسبسڈی میں کمی کا کہا ہے۔

 

 جبکہ حکام کی طرف سے آئی ایم ایف کو لگژری اشیاء درآمد پر پابندی کے فیصلے کا بتادیا گیاہے۔ حکام وزارت خزانہ کے مطابق آئی ایم ایف سے جاری ٹیبل ٹاک میں اچھی پیشرفت ہورہی ہے۔ عالمی مالياتی ادارے کو ٹیکس محاصل، بجٹ ٹارگٹ اورنجکاری پروگرام پربریف کیا گیا۔ دوران گفتگوبجلی وگیس پر سبسڈی بتدریج کم کرنے کی تجویزبھی دی گئی ہے۔

 

آئی ایم ایف کو بجلی کے کارخانوں کی نجکاری کے پروگرام کے متعلق بتانے کيساتھ ایکٹو فہرسٹ میں شامل سرکاری اداروں کی نجکاری کا شیڈول بھی دیا گیا۔ آئی ایم ایف نے لکچدارایکسچینج ریٹ پالیسی موجودہ شکل میں رکھنے پر زورديا گیا۔ مذاکرات میں پاکستان نے پالیسی ریٹ میں مزید اضافے کے متعلق رعایت مانگی ہے۔ پاکستان اورآئی ایم ایف کے درمیان نشست 25 مئی تک جاری رہی گی۔

کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں ریکارڈ کمی